انڈونیشیا : زلزلہ زدہ علاقوں میں ہلاکتوں میں اضافہ

انڈونیشیا کے مشرقی جزیرے لومبوک  میں 7 درجے کی شدت سے زلزلے کے بعد ہلاکتوں کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے

1026497
انڈونیشیا : زلزلہ زدہ علاقوں میں ہلاکتوں میں اضافہ

انڈونیشیا کے مشرقی جزیرے لومبوک  میں 7 درجے کی شدت سے زلزلے کے بعد ہلاکتوں کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے۔

قومی آفات انتظامیہ کے ترجمان سوٹوپو پروو  نگروہو نے جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ زلزلے میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد 91 تک پہنچ گئی ہے۔

نگروہو نے کہا ہے کہ لومبوک جزیرے کے شمالی اور مشرقی حصے اور ماتارام شہر زلزلے سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والے مقامات ہیں اور ہلاک ہونے والوں میں سے زیادہ تر ملبے تلے دب کر ہلاک ہوئے ہیں۔

انہوں نے کہا ہے کہ لومبوک کے مشرقی حصے میں جانی نقصان زیادہ ہوا ہے اور علاقے  بھر میں 300 کے قریب افراد زخمی ہوئے ہیں۔

نگروہو نے مزید کہا ہے کہ گیلی کے جزائر سے تقریباً ایک ہزار مقامی و غیر ملکی سیاحوں کو محفوظ مقامات پر منتقل کر دیا  گیا ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ کثیر تعداد میں صحت کے عملے کو زلزلہ زدہ علاقے   کی طرف روانہ کر دیا گیا ہے اور علاقے سے نکالے گئے افراد کی کمبل ، خیمے اور خوراک  جیسی بنیادی ضروریات  کو پورا کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

دوسری طرف صدر جوکو ویدودو  نے بھی زلزلے   پر افسوس کا اظہار کیا ہے اور تمام متعلقہ اداروں سے علاقے میں بہترین شکل میں کام کرنے کی اپیل کی ہے۔

دوسری طرف زلزلے کے وقت آسٹریلیا کے وزیر داخلہ پیٹر ڈٹون  انڈونیشیا کے دورے پر تھے اس بارے میں اپنے بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ "میں خوش قسمت ہوں کے زلزلے کی آفت میں محفوظ رہا"۔

وزیر داخلہ ڈٹون نے سڈنی میں 2GB ریڈیو کے لئے جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ جب زلزلہ آیا تو وہ علاقائی دہشتگردی کے خلاف جدوجہد  کی کانفرنس  میں شرکت کے لئے انڈونیشیا کے دورے پر تھے  اور زلزلے کے وقت جزیرہ لومبوک  کے ایک ہوٹل کی 12 ویں منزل پر تھے۔



متعللقہ خبریں