"ہمت نسواں مدد خدا"۲۱ سالہ خاتون تنہا بحر اوقیانوس عبور کر گئیں

جیسمین ہیریسن کا بحرِ اوقیانوس پار کرنے کے لیے سفر سے متعلق بات کرتے ہوئے کہنا ہے کہ  انہوں نے 70 دنوں کے دورانیے میں صرف چاکلیٹ اور بسکٹ کھا کر گزارا کیا

1588376
"ہمت نسواں مدد خدا"۲۱ سالہ خاتون تنہا بحر اوقیانوس عبور کر گئیں

بحراوقیانوس تنہا پار کرنے والی کم عمر ترین خاتون کا ریکارڈ 21 سالہ برطانوی خاتون جیسمین ہیریسن نے بنایا ہے۔

اسپوتنک کے مطابق،جیسمین ہیریسن کا بحرِ اوقیانوس پار کرنے کے لیے سفر سے متعلق بات کرتے ہوئے کہنا ہے کہ  انہوں نے 70 دنوں کے دورانیے میں صرف چاکلیٹ اور بسکٹ کھا کر گزارا کیا، اس دوران انہوں نے کم ازکم 40 کلو چاکلیٹ کھائی ہے ۔‘

جیسمین ہیریسن نے اپنے اس سفر سے متعلق مزید کہا کہ انہیں امید ہے کہ اُن کا یہ کارنامہ دوسروں کو اپنی صلاحیتوں کو پہچاننے میں مدد دے گا۔

واضح رہے کہ شمالی یارکشائر کی 21 سالہ ماہر پیراک جیسمین ہیریسن پارٹ ٹائم ٹیچر اور  پارٹ ٹائم بار ٹینڈر بھی ہیں۔ 

انہوں نے اپنے بحری سفر کا آغاز دسمبر میں جزائر کینیری میں لا گومیرا  کے ساحل سے کیا تھا۔ 

جیسمین تین ہزار میل کا سفر صرف  70 دن، 3 گھنٹے اور 48 منٹ میں طے کر کے اینٹی گا پہنچی ہیں ۔

 



متعللقہ خبریں