زندہ دلان لاہور نے "ارطغرل غازی" کے 2 مجسمے شہر میں نصب کروا دیئے

لاہور کی ایک نجی رہائشی مرغزار کالونی کی انتظامیہ نے ارطغرل غازی کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے اس کے دو مجسمے نصب کیے ہیں

1443969
زندہ دلان لاہور نے "ارطغرل غازی" کے 2 مجسمے شہر میں نصب کروا دیئے

لاہور میں قرون وسطیٰ کے تُرک لیڈر ارطغرل غازی کے مجسمے نصبے کیے گئے ہیں۔

یہ سلطنت عثمانیہ کے ابتدائی دور پر بنائے گئے ترک ڈرامے اور ترک ثقافت کی پاکستان میں مقبولیت کو ظاہر کر رہے ہیں۔
ترک ڈرامہ سیریل ارطغرل غازی کو سن دو ہزار انیس تک ترکی میں ہی نشر کیا گیا تھا۔

اس ڈرامے میں تیرہویں صدی کے ترک خانہ بدوش لیڈر کی کہانی بیان کی گئی ہے، جس نے منگولوں، صلیبیوں اور بازنطینیوں کا مقابلہ کیا تھا اور بعد ازاں سلطنت عثمانیہ کی بنیاد رکھی گئی تھی۔

لاہور کی ایک نجی رہائشی کالونی کی انتظامیہ نے ارطغرل غازی کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے اس کے دو مجسمے نصب کیے ہیں۔

مرغزار کالونی نامی ہاؤسنگ سوسائٹی کے سربراہ محمد شہزاد چیمہ کا  کہنا تھا کہ وہ خود بھی ارطغرل کو بہت پسند کرتے ہیں، ان کی تلوار اور گھوڑے کو بھی "یہ مجسمہ سلطنت عثمانیہ کے لیے ہماری محبت کی نشانی ہے اور جو جہاد ارطغرل نے کیا، اس سے ہمیں  دنیا بھر میں عزت نصیب ہوئی۔
پاکستان کے سرکاری ٹیلی وژن پی ٹی وی نے رمضان کے دوران اس ڈرامے کو اردو میں نشر کرنا شروع کیا تھا اور تب سے یہ پی ٹی وی کی تاریخ میں سب سے زیادہ دیکھا جانے والا پروگرام بن گیا ہے۔

پی ٹی وی کے منیجنگ ڈائریکٹر عامر منظور کا روئٹرز سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ابھی تک کسی پروگرام نے پاکستان میں اتنی ہلچل نہیں مچائی، جتنی اس ڈرامے نے مچائی ہے: ''لوگوں کے خیال میں یہ ترک گیم آف تھرونز ہے ۔
پہلے دو ماہ میں پی ٹی وی کے یو ٹیوب چینل پر اس کی پہلی قسط کو 58 ملین سے زائد افراد دیکھ چکے ہیں جبکہ اس مکمل سیریل کے 250 ملین سے زائد ویوز ہیں۔

دوسری جانب ترکی کے سرکاری ٹیلی ویژن  ٹی آر ٹی نے اس شو کے لیے رائلٹی بھی معاف کر دی ہے۔



متعللقہ خبریں