دنیا بھر میں 76 ملین افراد اپنے ملک کے اندر ہی  بے گھر ہیں، اقوام متحدہ

اندرونی نقل مکانی کی شرح پچھلے 10 سالوں میں دوگنا ہو گئی ہے اور سب سے زیادہ نقل مکانی سوڈان میں ہوئی ہے

2154814
دنیا بھر میں 76 ملین افراد اپنے ملک کے اندر ہی  بے گھر ہیں، اقوام متحدہ

اقوام متحدہ نے رپورٹ کیا ہےکہ دنیا بھر میں 76 ملین افراد اپنے ملک کے اندر ہی  بے گھر ہیں۔

داخلی نقل مکانی کے مسئلے کے حل کے لیے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گوٹیرس کے خصوصی مشیر رابرٹ پائپر نے اقوام متحدہ کے جنیوا دفتر میں منعقدہ پریس کانفرنس میں کہا کہ گوٹریس کی جانب سے اندرونی نقل مکانی  کے حوالے سے  ایکشن ایجنڈا شروع کیے ہوئے تقریباً دو سال ہو چکے ہیں۔

پائپر کا کہنا تھا کہ "آج دنیا بھر میں، 76 ملین افراد اندرونی طور پر بے گھر لوگ ہیں جو اپنے گھر، اپنی روزی روٹی اور بعض اوقات اپنی سرکاری شناخت کھو چکے ہیں۔" قدرتی آفات کے نتیجے میں بے گھر ہونے والے لوگ قلیل عرصے میں اپنے گھروں کو لوٹ گئے لیکن شام اور صومالیہ جیسے ممالک میں تنازعات کے متاثرین کئی سالوں تک اپنے گھر بار سے دور ہیں۔

پائپر نے اس طرف اشارہ دیا ہے  کہ اندرونی نقل مکانی کی شرح پچھلے 10 سالوں میں دوگنا ہو گئی ہے اور سب سے زیادہ نقل مکانی سوڈان میں ہوئی ہے۔

یہ یاد دلاتے ہوئے کہ اقوام متحدہ نے 2023 میں تقریباً 50 ملین اندرونی طور پر بے گھر افراد کو مدد فراہم کی ہے، پائپر نے اس بات پر زور دیا کہ اقوام متحدہ   ملک کے اندر  نقل مکانی کرنے پر مجبور ہونے والے انسانوں  کے لیے  مستقل حل تلاش کرنے کے لیے کام کر رہا ہے۔

مجموعی طور پر 116 ممالک میں 76 ملین لوگ  اپنے گھر بار سے دوران  زندگی بسر کر رہے ہیں ،  جن کے  90 فیصد کو تنازعات کی وجہ سے اپنا گھر بار چھوڑنا پڑا۔



متعللقہ خبریں