امریکہ، یوم آزادی کے موقع پر ہونے والے حملے میں اموات کی تعداد 7 ہو گئی

22 سالہ امریکی حملہ آور نے اس واقعے میں استعمال ہونے والی رائفل قانونی طور پر شکاگو کے علاقے سے خریدی تھی

1852532
امریکہ، یوم آزادی کے موقع پر ہونے والے حملے میں اموات کی تعداد 7 ہو گئی

امریکی ریاست ایلینوئس میں 4 جولائی  یوم آزادی   کی تقریب کے دوران  مسلح حملے میں  ہلاکتوں کی تعداد 7 تک ہو گئی۔

ہائی لینڈ پارک محکمہ پولیس نے  پریس کو بتایا ہے کہ 4 جولائی  کے حملے میں زخمی ہونے والا مزید ایک شخص چل بسا ہے، جس کے بعد مجموعی  اموات کی  تعداد 7 ہو گئی ہے۔

پولیس نےبتایا ہے کہ مشتبہ رابرٹ ای کریمو، جو اسی دن جائے وقوعہ سے 8 کلومیٹر کی دوری فرار ہوتے ہوئے پکڑا گیا،  نےحملے کی منصوبہ بندی کے لیے ہفتوں تک کام کیا اور اپنے نیم خودکار ہتھیار سے 70 سے زائد  بار فائر کیا۔

بتایا گیا ہے کہ کریمو جائے وقوعہ سے فرار ہونے کے لیے  عورت کے بھیس  میں ہجوم میں گھل مل گیا، لیکن پولیس کی جانب سے باریک بینی سے تلاشی لینے کے چند گھنٹوں بعد ہی  اسے حراست میں لے لیا گیا۔

لیک کاؤنٹی شیرف دفتر کے ڈپٹی چیف کرسٹوفر کوولی نے بتایا کہ 22 سالہ امریکی حملہ آور نے اس واقعے میں استعمال ہونے والی رائفل قانونی طور پر شکاگو کے علاقے سے خریدی تھی اور جس کار میں سواری کے دوران یہ پکڑا گیا اس سے بھی  مزید  ایک اور رائفل بھی  برآمد ہوئی ہے۔

کوویلی نے  بتایا کہ  حملہ آور نے متاثرین پر " اندھا دھند" گولی چلائی،  اور کسی کو  نسل یا مذہب کی وجہ سے منتخب کرنے کا کوئی اشارہ نہیں ملا۔"

دریں اثنا   7 افراد کی ہلاکت اور 30 کے زخمی ہونے کا موجب بننے والے رابرٹ ای کریمو   پر ہر مقتول کے لیے   علیحدہ علیحدہ قتل کی فرد جرم عائد کی گئی ہے۔

اسٹیٹ اٹارنی ایرک رائن ہارٹ نے ایک پریس ریلیز میں کریمو کے اس عمل کو "ایک سوچا سمجھا اور منصوبہ بندی  کردہ " کاروائی قرار دیا ہے اور ملزم پر 7 فرسٹ ڈگری قتل کا الزام  عائد کیا ہے۔

"یہ فائل میں شامل کیے جانے والے بہت سے الزامات میں سے  محض پہلا  فرد جرم ہے۔"

 



متعللقہ خبریں