سری لنکن معیشت مکمل طور پر تباہ، حکومت نے دیوالیہ نکلنے کا اعلان کر دیا

سری لنکا کو ایندھن، گیس، بجلی اور خوراک کی قلت سے بڑھ کر سنگین صورتحال کا سامنا ہے

1846806
سری لنکن معیشت مکمل طور پر تباہ، حکومت نے دیوالیہ نکلنے کا اعلان کر دیا

سری لنکن وزیر اعظم  رانیل وکرما سنگھے  نے اطلاع دی ہے کہ    کئی مہینوں سے اپنی تاریخ کے بد ترین بحران سے دو چار   ملکی معیشت    تباہ ہو گئی ہے اور تیل درآمد کرنے کے  بھی ان کے پاس رقم موجود نہیں۔

وزیر اعظم وکرما سنگھے نے پارلیمنٹ میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سری لنکا کو ایندھن، گیس، بجلی اور خوراک کی قلت سے بڑھ کر سنگین صورتحال کا سامنا ہے۔"ہماری معیشت مکمل طور پر تباہ ہو چکی ہے۔"

انہوں نے بتایا کہ  ہم  تیل کی درآمدات کی ادائیگی بھی نہیں کر سکتے، حکومت نے بحران  سے نمٹنے  کا موقع گنوا دیا۔

خیال رہے کہ اپنی تاریخ کے سب سے بڑے معاشی بحران کا سامنا کرنے والے ملک میں عوام نے مارچ کے آخر میں روزانہ 13 گھنٹے بجلی کی بندش کے احتجاجی مظاہروں  میں شدت پیدا کر دی تھی۔

9 مئی کو وزیر اعظم کے دفتر کے ارد گرد جمع ہونے والے مظاہرین اور حکومت کے حامیوں کے درمیان تصادم ہوا تھا اور دارالحکومت کولمبو میں فوج طلب کر لی گئی تھی۔

اپوزیشن کے بڑھتے ہوئے دباؤ کے بعد، وزیر اعظم مہندا  راجا پاکسے نے 9 مئی کو استعفیٰ  پیش کرتے ہوئے   کابینہ کو تحلیل کر دیا  تھا۔

 



متعللقہ خبریں