روس کا سپر سونک میزائیل کا کامیاب تجربہ

روسی وزارت دفاع کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ بحیرہ بیرنٹس میں "سوویت یونین کے بحری بیڑے کے ایڈمرل گورشکوف" فریگیٹ سے "Tsirkon" ہائپرسونک کروز میزائل  کا  تجربہ کیا گیا

1834041
روس  کا سپر سونک  میزائیل کا کامیاب تجربہ

روسی فوج نے بحیرہ بیرنٹس میں ہائپرسونک "س Tsirkon " میزائل کا تجربہ کیا۔

روسی وزارت دفاع کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ بحیرہ بیرنٹس میں "سوویت یونین کے بحری بیڑے کے ایڈمرل گورشکوف" فریگیٹ سے "Tsirkon" ہائپرسونک کروز میزائل  کا  تجربہ کیا گیا۔

بیان میں کہا گیا کہ یہ ٹیسٹ شاٹ ہتھیاروں کی نئی اقسام کی جانچ کے حصے کے طور پر کیا گیا اور کہا گیا کہ "تسرکون" میزائل نے تقریباً 1000 کلومیٹر دور سمندری ہدف کو کامیابی سے نشانہ بنایا، اور میزائل کی پرواز طے شدہ پیرامیٹرز کے مطابق ہوئی ۔

روسی وزارت دفاع نے گزشتہ سال اطلاع دی تھی کہ "Tsirkon" کو سب سے پہلے ایک جہاز سے فائر کیا گیا تھا۔

اعلان کیا گیا کہ "Tsirkon" جو کہ 2018 میں روسی صدر ولادیمیر پوتن کے متعارف کرائے گئے نئے ہائپرسونک ہتھیاروں میں سے ایک ہے، آواز کی رفتار سے 10 گنا (Mach 10) تک پہنچ سکتا ہے اور اس کی رینج 1000 سے 2000 کلومیٹر ہے۔



متعللقہ خبریں