دنیا بھر میں مہلک وائرس کورونا سے جانی نقصان 2 لاکھ کے قریب پہنچ گیا

امریکی حکام : تیز دھوپ کورونا وائرس کو تیزی سے ختم کرتی ہے، تاہم اس تحقیق پر ابھی مزید کام کرنے کی ضرورت ہے

1405110
دنیا بھر  میں مہلک وائرس کورونا  سے جانی نقصان 2 لاکھ کے قریب پہنچ گیا

دنیا بھر میں کورونا سے ہلاکتوں کی تعداد ایک لاکھ 97 ہزار 800 ہوگئی، 28 لاکھ 500 ہزار عالمی وبا کا شکار ہوچکے ہیں۔

امریکا میں کورونا وائرس کی تباہ کاریاں جاری ہیں، روزانہ سیکڑوں اموات اور نئے کورونا کیسز سامنے آرہے ہیں، 9 لاکھ 25 ہزار 38 افراد کورونا سے متاثر ہیں جبکہ ہزاروں افراد تشویشناک حالت میں زیر علاج ہیں، بحری بیڑے یو ایس ایس کڈ پر تعینات 18 اہلکار کورونا وائرس کا شکار ہوگئے۔ملک میں ہلاکتوں کی تعداد 52 ہزار 217 تک جا پہنچی ہے۔  دوسری جانب جارجیا، اوکلاہوما  اور الاسکا ریاستوں میں پابندیوں میں نرمی لائی گئی ہے۔

امریکی حکام نے دعویٰ کیا ہے کہ تیز دھوپ کورونا وائرس کو تیزی سے ختم کرتی ہے، تاہم اس تحقیق پر ابھی مزید کام کرنے کی ضرورت ہے۔ امریکی ہوم لینڈ سیکورٹی کے سائنس اور ٹیکنالوجی کے مشیر ولیم برائن کا کہنا تھا کہ دھوپ میں موجود بالائے بنفشی شعاعوں کا کورونا وائرس پر زبردست اثر دیکھا گیا ہے، موسم گرما میں وائرس کے پھیلاؤ میں کمی ہو سکتی ہے، تاہم عالمی ادارہ صحت کی عہدے دار ڈاکٹر مارگریٹ ہیرس نے کہا ہے کہ اس نظریے کو ثابت کرنے کے شواہد ناکافی ہیں۔

پینٹا گون نے اعلان کیا ہے کہ فوج میں کورونا سے 26 اموات ہوئی ہیں تو متاثر فوجیوں کی تعداد 6 ہزار سے زائد ہے۔

اٹلی میں  گزشتہ 24 گھنٹوں میں مزید 420 ہلاکتوں سے مجموعی جانی نقصان 25 ہزار 969 تک ہو گیا  ہے تو  مرض  میں مبتلا افراد کی تعداد کم ہوتے ہوئے 1 لاکھ 6 ہزار 527 ہو گئی ہے۔  وزارت صحت روبیرتو سپرانزا کا  کہنا ہے کہ  اب ہمارے ملک میں گراف  گراوٹ کے مرحلے میں داخل ہو چکا ہے۔ اب ہمیں آئندہ کے ایام کی جانب اعتماد سے تا ہم بیک وقت بڑی توجہ  کے ساتھ بڑھنا ہو گا۔

اسپین میں ایک دن میں مزید  378 اموات کے اضافے کے ساتھ اس ملک میں مجموعی جانی نقصان 22 ہزار 902 تک جا پہنچا ہے۔

فرانس میں  کورونا سے ایک دن میں  389 ہلاکتوں سے ملک میں  مجموعی اموات کی تعداد 22 ہزار 245 ہو گئی ہے۔

5 ہزار 653 جانی نقصان ہونےو الے جرمنی میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں مزید 9 ترک تارکین ِ وطن کورونا کی بھینٹ چڑھ گئے ہیں ، اس طرح اس ملک میں ابتک 109 ترک  باشندے مہلک وائرس کے  باعث جان کی بازی ہار چکے ہیں۔

بیلجیم میں وبا کے دائرہ کار میں عمل درآمد کردہ ’’جزوی لاک ڈاون‘‘ کو تین مراحل میں ہٹایا جا ئیگا۔ پہلے مرحلے میں 4 مئی سے بعض شو رومز کھول دیے جائینگے اور دوبارہ سے کام کاج کا آغاز ہو جائیگا۔ 18 مئی  کو شروع ہونے والے دوسرے مرحلے میں  اسکولوں کو باری باری کھولا جائیگا  جبکہ 8 جون سے  تمام تر ریستورانوں، کیفے اور شاپنگ مالز کو کھولنے کی منصوبہ بندی کی گئی ہے۔

ہالینڈ میں ہلاکتوں کی تعداد 4 ہزار 409  ہے تو اس ملک میں متاثرین کی تعداد 37 ہزار 190 ہے۔

بعض دیگر مغربی ممالک میں جانی نقصان اور  متاثرین کی تعداد کچھ یوں ہے:

آسڑیلیا 80، 6 ہزار 687،  نیو زی لینڈ 18، 1 ہزار 461، برازیل3 ہزار 670، 52 ہزار 995، کولمبیا 225، 4 ہزار 881 اور کیوبا 49، 1 ہزار 285

 

 



متعللقہ خبریں