گزشتہ ماہ فضائی حملے میں ہلاک شدہ کرائے کے فوجی روسی تھے: لیبیا

بتایا گیا ہے کہ  لیبیا  کے دارالحکومت طرابلس  کے قریب  گزشتہ ماہ ایک فضائی حملے میں ہلاک شدہ     جنرل حفتر ملیشیا کےلیے لڑنے والے35 کرائے کے   فوجیوں کا تعلق روس سے تھا

گزشتہ ماہ فضائی حملے میں ہلاک شدہ کرائے کے فوجی روسی تھے: لیبیا

بتایا گیا ہے کہ  لیبیا  کے دارالحکومت طرابلس  کے قریب  گزشتہ ماہ ایک فضائی حملے میں ہلاک شدہ     جنرل حفتر ملیشیا کےلیے لڑنے والے35 کرائے کے   فوجیوں کا تعلق روس سے تھا ۔

 فرانسیسی جریدے  لے پوائنٹ  نے اس بات کی تصدیق   کرتےہوئے  یہ نہیں بتایا کہ اس واقعے میں کون ملوث ہے۔

 جریدےکا لکھنا ہے کہ  ان فوجیوں  کا تعلق  روسی صدر پوتین   کے ایک قریبی ساتھی   کے  قائم کردہ  ویگنر گروپ سے تھا ۔

 یاد رہے کہ  لیبیا کی قومی مفا ہمتی حکومت     کے  آپریشن "برکان الغضب"  کی کمان نے  27 ستمبر کو اعلان کیا تھا کہ  حفتر ملیشیا    سے وابستہ 8 کرائے کے فوجی مارے گئے ہیں۔

  وزیر داخلہ  فتحی بشاغہ نے  بھی اپنے  بیان  میں متحدہ عرب امارات  پر الزام لگایا تھا کہ وہ  حفتر ملیشیا  کی مدد  کےلیے  ایک روسی کمپنی اور سوڈانی جان جاوید نامی ملیشیا   کی مالی اعانت کر رہا ہے۔

 

 


ٹیگز: روس , فوجی , لیبیا

متعللقہ خبریں