لیبیا میں جھڑپیں شدت اختیار کرگئیں،آپریشن میں تیزی

لیبیا کی سرکاری فوج کے ترجمان میجر جنرل احمد المسماری نے کہا ہے کہ دارالحکومت طرابلس میں شدت پسندوں کے خلاف جاری آپریشن میں 28 فوجی ہلاک اور 92 زخمی ہوئےہیں

لیبیا میں جھڑپیں شدت اختیار کرگئیں،آپریشن میں تیزی

لیبیا کی سرکاری فوج کے ترجمان میجر جنرل احمد المسماری نے کہا ہے کہ دارالحکومت طرابلس میں شدت پسندوں کے خلاف جاری آپریشن میں 28 فوجی ہلاک اور 92 زخمی ہوئےہیں۔

خبر  کےمطابق، ایک پریس کانفرنس سے خطاب میں ترجمان نے کہا کہ طرابلس آپریشن کو کامیاب بنانےکے لیے فوج کو ہرطرح کی سہولیات اور ضروری سامان فراہم کیا جائے گا۔

ایک سوال کے جواب میں جنرل المسماری کا کہنا تھا کہ طرابلس کی  لڑائی میں کسی فوجی کے لاپتہ  یا گرفتار ہونے کا کوئی واقعہ پیش نہیں آیا۔

انہوں‌نے طرابلس کی قومی وفاقی حکومت کی طرف سے بعض فوجیوں کی گرفتاری کی خبروں کی تردید  بھی کی۔

لیبیائی  فوج نے طرابلس ہوائی اڈے کا کنٹرول مکمل طورپر سنبھالنے کے بعد ہوائی اڈے پر موجود بعض عناصر کو حراست میں لےلیا ہے۔

ترجمان نے کہا کہ مصراتہ کے ہوائی اڈے سے اڑنے والے طیاروں‌نے الغریانی کے مقام پر تین فضائی حملے کیے ہیں۔

خیال رہے کہ لیبیائی  فوج دارالحکومت طرابلس میں داعش اور القاعدہ سے منسلک شدت پسند گروہوں کے خلاف برسرپیکار ہے۔

 

 



متعللقہ خبریں