چشمہ امن آپریشن

مقصد امن
ہدف دہشت گردی

امریکی سینیٹ میں پاکستان کو ایف سولہ طیارے فروخت کرنے کے خلاف قرارداد مسترد

امریکہ میں پاکستان کے سفیر جلیل عباس جیلانی نے قرارداد مسترد کئے جانے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ انتہا پسند اور دہشت گرد قوتوں کیخلاف پاکستان کی سکیورٹی فورسز کی قربانیوں کا اعتراف ہے

امریکی سینیٹ میں پاکستان کو ایف سولہ طیارے فروخت کرنے کے خلاف قرارداد مسترد

امریکی سینیٹ نے پاکستان کو ایف سولہ طیارے فروخت کرنے کے خلاف قرارداد مستردکردی۔

امریکی سینیٹ میں ری پبلکن پارٹی کے سینیٹر رینڈ پال نے پاکستان کو ایف سولہ طیاروں کی فروخت روکنے کے لئے قرارداد پیش کی جسے ایوان نے کثرت رائے سے مسترد کردیا۔ قرار داد کےحق میں 24 اور مخالفت میں 71 ووٹ ڈالےگئے۔

امریکہ میں پاکستان کے سفیر جلیل عباس جیلانی نے قرارداد مسترد کئے جانے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ انتہا پسند اور دہشت گرد قوتوں کیخلاف پاکستان کی سکیورٹی فورسز کی قربانیوں کا اعتراف ہے۔انہوں نے اسے حکومت کی کامیاب خارجہ پالیسی کا نتیجہ قرار دیا۔پاکستانی سفیر نے کہا بل کا مسترد ہونا پاک امریکہ تعلقات کی مضبوطی کا بھی ثبوت ہے۔

سینٹ کی خارجہ تعلقات کمیٹی میں سینئر ڈیمو کریٹ سینیٹر بن کارڈین نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کو اپنی فضائیہ اور عسکریت پسندی اور دہشت گردی کیخلاف خصوصاً افغان سرحدی علاقے میں اس کی سرگرمیوں کو جدید خطوط پر استوار کرنے کی ضرورت ہے۔

واضح رہے کہ امریکا نے گزشتہ ماہ پاکستان کو 8 ایف سولہ طیارے فروخت کرنے کی باقاعدہ منظوری دی تھی جب کہ بھارت نے پاکستان کو جنگی طیاروں کی فروخت پر امریکا کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا تھا اور سینیٹ میں پاکستان کو طیاروں کی فروخت روکنے کے لئے کوششیں شروع کردی تھیں۔



متعللقہ خبریں