ترکی اور رومانیہ کے باہمی تعلقات کی 140 ویں سالگرہ

مہمان وزیر اعظم کے ساتھ اقتصادی، سلامتی اور دہشت گردی کے خلاف جدوجہد سمیت متعدد عنوانات پر دو طرفہ مذاکرات سر انجام پائے ہیں

ترکی اور رومانیہ کے باہمی تعلقات کی 140 ویں سالگرہ

صدر رجب طیب ایردوان  کا کہنا ہے وہ  دہشت گرد تنظیم فیتو کی 15 جولائی 2016 کے بغاوت اقدام کے بعد ترکی کے ساتھ  رومانیہ کے تعاون کو فراموش نہیں کریں گے۔

انہوں نے بتا یا کہ رومانیہ میں  فیتو سے تعلق رکھنے والے افراد اور تنظیموں کے خلاف ضروری اقدامات کے لیے رومانوی  اداروں کے ساتھ رابطے جاری ہیں۔

صدر رجب طیب ایردوان نے رومانوی وزیر اعظم ویوریکا دانسیلا  کےہمراہ  ایوان صدر میں  بین الاوفود اموری ضیافت کے بعد مشترکہ  پریس کانفرس کا اہتمام کیا۔

صدر ایردوان نے  اس بات کی یاد دہانی کرائی کہ امسال دونوں ملکوں کے مابین  سفارتی تعلقات کے قیام کی  140 ویں سالگرہ ہے۔

دونوں ملکوں کے باہمی تعلقات کے سن 2011 سے سٹریٹیجک شراکت دار سطح پر استوار ہونے کی وضاحت کرنے والے جناب ایردوان نے اس بات پر زور دیا کہ ملکوں کے درمیان دوستی سینکڑوں برسوں سے بین الامعاشرتی تعلقات اور ثقافتی لین دین کا   ثمر ہے۔

انہوں نے بتایا کہ مہمان وزیر اعظم کے ساتھ اقتصادی، سلامتی اور دہشت گردی کے خلاف جدوجہد سمیت متعدد عنوانات پر دو طرفہ مذاکرات سر انجام پائے ہیں، مستقبل میں باہمی تعاون کو مزید فروغ دینے کے لیے ممکنہ اقدامات پر غور و خوض کیا گیا ہے۔

صدرِ ترکی نے رومانوی   کاروباری شخصیات کو ترکی میں سرمایہ کاری کی اپیل بھی  کی۔

نیٹو کے اتحادی رومانیہ کے میثاق کے اندر  ترکی کی دہشت گردی کے خلاف کاروائیوں  میں تعاون   کے شکر گزار ہونے کا اشارہ دینے والے  جناب ایردوان  کا کہنا تھا کہ "آئندہ برس کے آغاز کے ساتھ رومانیہ کی یورپی  یونین کی عبوری صدارت   یونین  کے ساتھ ہمارے تعلقات کے اعتبار سے ایک موقع  ہو گا۔"

رومانوی وزیر اعظم ویوریکا دانسیلہ نے بھی  اس موقع پر کہا کہ ان کا ملک ترکی کے سلسلہ رکنیت یورپی یونین کے حوالے سے اقدامات کی حمایت کو جاری رکھے گا۔

مذاکرات میں گزشتہ برس سے ابتک جاری سٹریٹیجک شراکت داری تعلقات  پر غور کرنے کی وضاحت کرنے والی دانسیلہ نے دو طرفہ دوستی و مشترکہ اقدار کی بنیادوں  پر مضبوطی حاصل کرنے والے باہمء تعلقات کی جانب اشارہ بھی دیا۔

انہوں نے بتایا کہ ترک اور رومانوی اداروں کے مابین دو طرفہ اور علاقائی مفہوم میں سیاسی، دفاعی، تجارتی، تعلیمی اور ثقافتی  شعبہ جات میں متعدد منصوبوں پر کام ہو رہا ہے۔

انہوں نے یہ بھی واضح کیا کہ رومانیہ، ترکی کے سلسلہ رکنییت یورپی یونین کی حمایت کو جاری رکھے گا، ہم ترکی  کی خطہ یورپ کی سلامتی کے حوالے سے  خدمات کی قدر کرتے ہیں جبکہ اس کی مہاجرین کے حوالے سے پالیسیاں بھی قابل ِ ستائش ہیں۔

 

 



متعللقہ خبریں