یورپی یونین سے علیحدگی عالمی سیاست میں برطانوی دور  کے دوبارہ آغاز کا وسیلہ بنے گی: ولئیم سن

یورپی یونین بعض نقاط پر  ہمارے ویژن کو محدود کر کے ہمیں افق پر نگاہ ڈالنے سے محروم کر رہی تھی۔ لیکن اب ہم زیادہ آگے جانے اور بلندیوں کو ہدف بنانے کے معاملے میں آزاد ہیں: وزیر دفاع  گیوین ولئیم سن

یورپی یونین سے علیحدگی عالمی سیاست میں برطانوی دور  کے دوبارہ آغاز کا وسیلہ بنے گی: ولئیم سن

برطانیہ کے وزیر دفاع  گیوین ولئیم سن  نے کہا ہے کہ برطانیہ کی یورپی یونین سے علیحدگی کا مرحلہ عالمی سیاست  میں برطانوی دور  کے دوبارہ آغاز کا وسیلہ بنے گا۔

واشنگٹن کی اٹلانٹک کونسل کے لئے انٹرویو میں ولئیم سن نے کہا ہے کہ بریگزٹ نے برطانیہ کو عالمی سیاست میں دوبارہ سے ابھرنے کا موقع فراہم کیا ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ یورپی یونین بعض نقاط پر  ہمارے ویژن کو محدود کر کے ہمیں افق پر نگاہ ڈالنے سے محروم کر رہی تھی۔ لیکن اب ہم زیادہ آگے جانے اور بلندیوں کو ہدف بنانے کے معاملے میں آزاد ہیں۔

برگزٹ مرحلے کی وجہ سے دفاع کے موضوع پر بعض اندیشے پیدا ہونے کے بارے میں سوال کے جواب میں گیوین ولئیم سن نے کہا کہ برطانیہ کی یورپی یونین سے علیحدگی  یورپی سلامتی پر اثر انداز نہیں ہو گی۔

انہوں نے دفاع اور فوجی طاقت کے حوالے سے برطانیہ کے مضبوط ترین ممالک میں شامل ہونے پر زور دیا اور "برائے مہربانی میرے ملک کو ہرگز کم تر خیال نہ کریں" کے الفاظ استعمال کر کے دفاعی مصارف کے موضوع پر  امریکی انتظامیہ کی تنقیدوں کا ڈھکے الفاظ میں جواب دیا۔

انہوں نے بحرین سے بحیرہ ہند کے برطانوی جزائر، قبرص اور ایستونیا تک متعدد ممالک میں برطانوی فوجیوں کی موجودگی کی یاد دہانی کروائی اور کہا کہ دنیا میں کوئی بھی صورتحال پیش آنے کی صورت میں ہم فوری مداخلت کے لئے تیار ہیں۔

صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے نیٹو کو اہمیت نہ دینے کا ڈھکے الفاظ میں جواب دیتے ہوئے  وزیر دفاع گیوین ولئیم  سن نے کہا کہ نیٹو  سے صرف یورپی ممالک ہی فائدہ نہیں اٹھا رہے بلکہ اس کی پانچویں شق کی منظوری 11 ستمبر کے حملوں کے بعد دی گئی اور اس دہشتگردی کے حملے کے بعد برطانیہ اور دیگر نیٹو ممالک نے آپ کا ساتھ دیا۔

واضح رہے کہ اپنی انتخابی مہم کے دوران صدر ٹرمپ نے نیٹو کو ایک کہنہ اتحاد قرار دیا تھا اور عہدہ صدارت سنبھالنے کے بعد دفاعی مصارف کو اپنی گراس ڈومیسٹک پروڈکٹ کے 2 فیصد شرح تک نہ لانے کی وجہ سے نیٹو ممالک پر تنقید کی تھی۔

علاوہ ازیں ٹرمپ نے کہا  تھا کہ اگر رکن ممالک اپنے وعدوں کو پورا نہیں کرتے تو وہ یورپ کا دفاع نہیں کریں گے۔



متعللقہ خبریں