پوری دنیا شام اجلاس کے مثبت نتائج کی منتظر ہے، صدر ایردوان

آستانہ  کے سلسلے پر عمل درآمد لازمی ہے،  ہم شام میں ملکی سالمیت اور کسی پر امن سیاسی حل کے متمنی ہیں

پوری دنیا شام اجلاس کے مثبت نتائج کی منتظر ہے، صدر ایردوان

صدر  رجب طیب ایردوان  نے خبر دار کیا ہے کہ  شامی شہر ادلیب میں  حملے فلاکت، قتل ِ عام اور انسانی المیہ کا موجب بنیں گے۔

ایرانی دارالحکومت تہران میں صدر رجب طیب ایردوان، روسی صدر ولادیمر پوتن اور ایرانی صدر حسن روحانی  سہہ فریقی اجلاس میں یکجا ہوئے۔

اجلاس پر صدر ایردوان کے "ادلیب میں فائر بندی" کے مطالبے نے اپنی مہر ثبت کی۔

سربراہی اجلاس  کے نتائج  کا دنیا بھر کی جانب سے بڑی بے صبری سے  انتظار کیے  جانے کی وضاحت کرنے والے جناب ایردوان نے کہا کہ مجھے یقین ہے کہ اجلاس کے فیصلے توقعات کے عین مطابق ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ آج کشیدگی میں گراوٹ علاقوں  میں سے صرف ادلیب باقی بچا ہے، علاقے کے مخالفین، علاقے  کا تعین کیے جانے کے بعد رونما ہونے والے واقعات کی بنا پر  ان کے ساتھ  دھوکہ بازی  ہونے کی سوچ رکھتے ہیں۔ اسوقت علاقے  کی پیش رفت کافی حد تک   تشویش ناک ہے۔

ادلیب   میں دہشت گردوں کے خلاف جدوجہد  ایک صبر والا کام ہے، آستانہ  کے سلسلے پر عمل درآمد لازمی ہے،  ہم شام میں ملکی سالمیت اور کسی پر امن سیاسی حل کے متمنی ہیں۔

ادلیب  کو ہر گز خون کی نہر میں  بدلنے کی اجازت نہ دینے اور اس ضمن میں دوست ممالک سے  تعاون   کی توقع کا اظہار کرنے والے ایردوان نے کہا کہ "ہمیں ادلیب  میں کسی مناسب راہ کو تلاش کرنا چاہیے۔



متعللقہ خبریں