ترک مساجد پر حملے ،ترکی کا حکومت جرمنی سے احتجاج

نائب وزیراعظم اور حکومتی ترجمان بکر بوزداع نے کہا ہے کہ  جرمنی میں ترک مساجد پر حملوں کے بارے میں  حکومت نے احتجاجی مراسلہ بھیجا ہے

ترک مساجد پر حملے ،ترکی کا حکومت جرمنی سے احتجاج

 نائب وزیراعظم اور حکومتی ترجمان بکر بوزداع نے کہا ہے کہ  جرمنی میں ترک مساجد پر حملوں کے بارے میں  حکومت نے احتجاجی مراسلہ بھیجا ہے۔

 وزرا کابینہ کے اجلاس کے بعد   ایک اخباری کانفرنس    کے موقع پر انہوں نے  کہا کہ شامی شہر عفرین  میں جاری آپریشن کے نتیجے میں جلد  ہی   دہشتگردوں کا  مکمل صفایا  کیا جائے گا  فی الوقت  3381 دہشتگرد مارے گئے ہیں جبکہ ہمارے 42 فوجی شہید اور 202 زخمی ہوئے ہیں۔

جرمنی میں ترک مساجد  پر حملوں کے حوالے سے نائب وزیراعظم نے  کہا کہ   ماضی میں   بھی اس قسم کے حملے ہوتے رہے ہیں جس پر حکومت جرمنی کی خاموشی پُر معنی ہے  لہذا ہم نے جرمن سفیر کو دفتر خارجہ طلب کرتے ہوئے   اس بارے  میں احتجاج کیا ہے۔

 امریکہ  کی طرف سے شامی شہر منبچ کو دہشت گردوں سے پاک کرنےکے لیے  مشترکہ آپریشن   پر مذاکرات کا حوالہ دیتےہوئے ان کا کہنا تھا کہ  مذاکرات کی ناکامی کی صورت میں بھی    ترکی   اس آپریشن کو جاری رکھے گا۔

 بوزداع نے  شمالی عراق    میں دہشتگردوں کے خلاف آپریشن   کے سلسلے میں حکومت عراق سے جاری مذاکرات     میں پیش رفت کا اشارہ دیا  ۔

 

 

 



متعللقہ خبریں