عالمی حرارت: پاکستان سمیت وسطی ایشیا مِں شدید گرمی پڑے گی، ماہرین کا انتباہ

ایشیائی ترقیاتی بینک  کی رپورٹ کے مطابق سن 2100 تک     شمالی چین ،تاجکستان،پاکستان اور افغانستان  میں درجہ حرارت 8 ڈگری سینٹی گریڈ  مزید بڑھ جانے  کی وجہ سے  وسطی ایشیا٫ قحط سالی کا شکار ہو سکتا ہے

عالمی حرارت: پاکستان سمیت وسطی ایشیا مِں شدید گرمی پڑے گی، ماہرین کا انتباہ

  دنیا کو  عالمی حرارت سے خطرہ ہے ۔

  ایشیائی ترقیاتی بینک  کی رپورٹ کے مطابق ، بحر الکاہل   میں واقع جزائر   پر موجود جانداروں کی نسل  ناپید ہوتی جا رہی ہے   جبکہ  سن 2100 تک     شمالی چین ،تاجکستان،پاکستان اور افغانستان  میں درجہ حرارت 8 ڈگری سینٹی گریڈ  مزید بڑھ جانے  کی وجہ سے  وسطی ایشیا٫ قحط سالی کا شکار ہو سکتا ہے ۔

 یہ بھی بتایا گیا ہے کہ  ایشیا کے بعض  ممالک میں  شدید بارشوں کی وجہ سے چاول اور دیگر اناج کی فصلوں کی کاشت میں کمی واقع ہو سکتی ہے ۔

  باور رہے کہ   سمندری سطح میں اضافے کا بھی خطرہ پایا جا تاہے    جو کہ انڈونیشیا  اور بنگلہ دیش  جیسے ممالک کے نشیبی  شہروں  میں  تباہی مچا سکتے ہیں۔

امریکی ماہرین نے  شہری  ہوا بازی کے شعبے کو بھی اس سلسلے میں متنبہ کرتےہوئے کہا ہے کہ  درجہ حرارت میں  اضافے سے  طیاروں کے مجموعی  وزن  میں کمی لاتےہوئے اُنہیں  طویل رن وے کی ضرورت درکار ہوگی  ۔

 



متعللقہ خبریں