ٹرمپ انتظامیہ نے چین کی مزید 279 مصنوعات پر اضافی درآمدی ٹیکس عائد کردیا

امریکہ کی طرف سے 16 ارب کے اضافی ٹیکس عائد کرنے کے بعد چین نے ایک مرتبہ پھر کہا ہے کہ ایک ڈالر اضافی ٹیکس کا جواب ڈالر میں ہی دیا جائے گا

ٹرمپ انتظامیہ نے چین کی مزید 279 مصنوعات پر اضافی درآمدی ٹیکس عائد کردیا

 ٹرمپ انتظامیہ نے چین کی مزید 279 مصنوعات پر اضافی درآمدی ٹیکس عائد کرنے  کا فیصلہ کیا ہے۔  اضافی ٹیکس ان محصولات کے علاوہ ہوگا جو پہلے ہی چین پر عائد کئے جاچکے ہیں۔

امریکہ کی طرف سے 16 ارب کے اضافی ٹیکس عائد کرنے کے بعد چین نے ایک مرتبہ پھر کہا ہے کہ ایک ڈالر اضافی ٹیکس کا جواب ڈالر میں ہی دیا جائے گا۔

چین اور امریکہ کی طرف سے ایک دوسرے کی مصنوعات پر اضافی درآمدی مصنوعات عائد کرنے کے باعث عالمی سطح پر ایک تجارتی جنگ شروع ہونے کا خدشہ پیدا ہوچکا ہے، دونوں ممالک ایک دوسرے کو دھمکی دینے کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہیں۔

وائٹ ہاؤس کے مشیر برائے اقتصادیات نے بھی واضح کرتے ہوئے کہا ہے کہ چین امریکی صدر کے ارادوں کو کمزور نہ سمجھے، وہ اپنی تجارتی پالیسیوں پر عمل پیرا رہیں گے۔

امریکہ کی جانب سے جاری بیان کے مطابق امریکی ٹیکنالوجی چوری کرنے اور اسے استعمال کرنے کی وجہ سے چینی مصنوعات پر اضافی درآمدی محصولات عائد کیے گئے ہیں، ان مصنوعات میں موٹر سائیکل، ٹریکٹر، ریلوے کے پرزہ جات، الیکٹرانک سرکٹ، موٹریں اور کھیتی باڑی کا سامان شامل ہے۔

 



متعللقہ خبریں