تیل کی پیداوار میں کٹوتی برقرار رکھی جائے:اوپیک

تیل برآمد کرنے والے ممالک کی تنظیم اوپیک نے سن  2018 کے اختتام تک تیل کی پیداوار میں موجودہ کٹوتی برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے

تیل کی پیداوار میں کٹوتی برقرار رکھی جائے:اوپیک

تیل برآمد کرنے والے ممالک کی تنظیم اوپیک نے سن  2018 کے اختتام تک تیل کی پیداوار میں موجودہ کٹوتی برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہےالبتہ اس کا کہنا ہے کہ اگر عالمی منڈیوں میں اس دوران  تیل کی قیمتوں میں بہتری آتی ہے تو پھر اس فیصلے پر نظر ثانی کی جاسکتی ہے۔

یہ فیصلہ گزشتہ روز  آسٹریا کے دارالحکومت ویانا میں تنظیم کے رکن ممالک کے وزرائے تیل کے اجلاس میں کیا گیا ہے۔

دوسری جانب  روس نے بھی اس سال کے اوائل میں اپنی تیل کی پیداوار میں نمایاں کمی کردی تھی اور وہ تنظیم سے ایک واضح پیغام کا تقاضا کررہا تھا کہ پیداوار میں کٹوتی کے اس مسئلے سے قیمتوں میں بہتری آنے کی صورت میں کیسے نمٹا جائے گا۔

اوپیک کے رکن ممالک نے گزشتہ سال نومبر میں تیل کی یومیہ پیداوار میں تقریباً 18 لاکھ بیرل کمی سے اتفاق کیا تھا جس پر جنوری 2017 سے عمل درآمد کیا جارہا ہے۔

اس س معاہدے  کی مدت مارچ میں ختم ہورہی تھی لیکن اب تنظیم کے اجلاس میں اس مدت میں مزید نو ماہ کی توسیع کردی گئی ہے اور اگلے سال  کے اختتام تک پیداوار میں یہ کٹوتی برقرار ر کھی جائے گی۔

 



متعللقہ خبریں