متحدہ عرب امارات کے ولی عہد امدادی پیکیج پر بات چیت کے لیے پاکستان آرہے ہیں

پاکستان کے لیے تیار کردہ پیکیج میں رین ارب ڈالر نقد اور تیل کی فراہمی کے معاملات شامل ہیں

متحدہ عرب امارات کے ولی عہد امدادی پیکیج پر بات چیت کے لیے پاکستان آرہے ہیں

پاکستان کو درپیش ادائیگیوں کے چیلنجز سے نمٹنے میں معاونت فراہم کرنےکے لیے متحدہ عرب امارات کے ولی عہد6 جنوری کو پاکستان کا دورہ کریں گے۔

ولی عہد کی جانب سے دیے جانے والے پیکیج میں 3 ارب ڈالر نقد جمع کرانے کے علاوہ مؤخر ادائیگیوں پر 3 ارب 20 کروڑ ڈالر مالیت کے تیل کی فراہمی بھی شامل ہے۔

وفاقی کابینہ کے رکن نے بتایا کہ  یو اے ای کے پیکج کی شرائط و ضوابط اور حجم  بالکل سعودی عرب کی جانب سے عندیہ دیے گئے پیکیج جیسا ہے۔

خیال رہے کہ اس پیکیج سے پاکستان، دوست ممالک سے تیل اور گیس کی درآمدات پر تقریباً 7 ارب 90 کروڑ ڈالر کی بچت حاصل کرسکے گا، جو 12سے 13 ارب ڈالر کے سالانہ درآمدی تیل  بل کی مالیت کے 60 فیصد سے زائد ہے۔

رکن کابینہ نے بتایا کہ  متحدہ عرب امارات اور سعودی عرب سے مجموعی مالی امداد اور آئی ایف ٹی سی کی ٹریڈ فنانس کی رقم اس وقت 13 ارب 90 کروڑ ڈالر سے 14 ارب ڈالر تک پہنچ گئی ہے جبکہ دونوں ممالک کی جانب سے 3، 3 ارب ڈالر نقد جمع کرائے جائیں گے۔

انہوں نے مزید بتایا  کہ فروری کے پہلے ہفتے میں سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کا  بھی دورہ پاکستان متوقع ہے اور سعودی حکومت کی  درخواست پر پیٹرو-کیمیکل کمپلیکس کے قیام کے مفاہمت کی یاد داشت پر کام ہو رہا ہے۔

 



متعللقہ خبریں