عمران خان کےحلف اٹھانےکی تقریب کی تیاریاں مکمل، شیروانی یاسوٹ میں حلف اٹھانےسےمتعلق عوام سےرائے طلب

پاکستان تحریکِ انصاف (پی ٹی آئی) کے ترجمان نعیم الحق نے کہا ہے  کہ  پاکستان تحریکِ انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان ایوانِ صدر میں حلف اٹھائیں گے۔ حلف برداری کی یہ تقریب انتہائی سادہ لیکن پروقار ہو گی

عمران  خان کےحلف اٹھانےکی تقریب کی تیاریاں مکمل، شیروانی یاسوٹ میں حلف اٹھانےسےمتعلق عوام سےرائے طلب

عمران خان 13 اگست کو  قومی اسمبلی کے اراکان ، ڈپٹی اسپیکر اور اسپیکر  کےحلف اٹھانے کے چند روز کے اندر اندر   ملک کے نئے وزیراعظم کی حیثیت سے حلف اٹھا  لیں  گے۔

جمعرات کو بنی گالہ میں میڈیا سے گفتگو میں انہو ں نے کہا کہ کراچی میں شاہ محمود قریشی اور جہانگیر ترین کی ملاقات جی ڈی اے سے ہوئی ہے ،اتحادیوں کی شمولیت سے قومی اسمبلی میں ہماری تعداد 180 تک پہنچ گئی ۔پنجاب میں ہمارے اراکین کی تعداد 186 تک پہنچ چکی ہے ،اگر 170 اراکین عمران خان کو منتخب کرتے ہیں تو دوسرے راؤنڈ کی ضرورت نہیں ہے ،عمران خان پہلے راونڈ میں ہی وزیراعظم منتخب ہو جائیں گے ۔

پاکستان تحریکِ اںصاف (پی ٹی آئی) کے ترجمان نعیم الحق نے کہا ہے  کہ  پاکستان تحریکِ انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان ایوانِ صدر میں حلف اٹھائیں گے۔ حلف برداری کی یہ تقریب انتہائی سادہ لیکن پروقار ہو گی۔

س کے بعد وزیر اعظم کے عہدے کے لیے کاغذاتِ نامزدگیجمع ہوں گے اور پھر اکا انتخاب ہوگا ۔اس حوالے سے امکان ظاہر کیا جارہا ہے کہ یہ سب 14 اگست سے پہلے ہو جائے گا اور عمران خان14 اگست کو بطور وزیر اعظم حلف اٹھائیں گے

توقع ہے کہ عمران خان 16 یا 17 اگست کو حلف اٹھائیں گے ،عمران خان نے وزیر اعلیٰ اور سپیکر کے نام فائنل کر لئے ہیں۔دریں اثناء پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان کا منصب سنبھالتے ہی قوم سے خطاب متوقع ہے ۔نجی ٹی وی کے مطابق نامزد وزیراعظم اپنے انتخاب اورکابینہ کی حلف برداری کے بعد اپنی حکومتی پالیسی کے حوالے سے قوم سے خطاب کرینگے جسے اندرون اوربیرون ملک براہ راست نشر کرنے کیلئے پی ٹی وی اور ریڈیو پاکستان کے نیوزسٹوڈیوزکواپ گریڈکرنے کیلئے وزارت اطلاعات کی جانب سے ہدایات جاری کی گئی ہیں۔سٹوڈیوزمیں پاکستانی پرچم اورعقب میں قائد اعظم محمدعلی جناح ؒکی تصاویرنصب کی جائیں گی۔

اس سے قبل عمران خان نے عوام کے درمیان وزارت عظمیٰ کا حلف لینے کی خواہش کا اظہار کیا تھا تاہم سیکیورٹی کلیئرنس  نہ ہونے کی وجہ سے  حلف اتھانے کی تقریب ایوانِ صدر ہی منعقد کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے  اور اس مقصد کے لیے  صدر   ممنون حسین نے اپنا  غیر ملکی  دورہ بھی  ملتوی کردیا ہے۔



متعللقہ خبریں