کیا راجہ یاسر ہمایوں پنجاب کے وزیر اعلیٰ ہوں گے؟ عمران خان پنجاب کو سرپرائز دینا چاہتے ہیں؟

اس وقت تک پنجاب کےوزیراعلیٰ کےلیے جس نام پرغورکیا جا رہا ہےاس میں چکوال چکوال سےتعلق رکھنےوالےراجہ یاسر ہمایوں کا نام سر فہرست ہے۔ راجہ یاسر ہمایوں  پوٹوہار ریجن کے ضلع سے تعلق رکھتے ہیں جہاں پی ٹی آئی نے 2018ء کےعام انتخابات میں سب سے زیادہ ووٹ حاصل کیے

کیا راجہ یاسر ہمایوں پنجاب کے وزیر اعلیٰ  ہوں گے؟ عمران خان پنجاب  کو سرپرائز دینا چاہتے ہیں؟

پاکستان تحریکِ انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ وزیرِ اعلیٰ پنجاب کا نام سب کے لیے سرپرائز ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف نے پنجاب میں حکومت سازی کے لیے ممبران کی تعداد مکمل کرلی ہے اور دعویٰ کیا ہے 29 آزاد ارکان میں سے 25ارکان تحریک انصاف میں شامل ہوچکے ہیں۔

اس وقت تک  پنجاب کے وزیر اعلیٰ کے  لیے جس نام پر غور کیا جا  رہا ہے اس میں چکوال چکوال سے تعلق رکھنے والے راجہ یاسر ہمایوں کا نام سر فہرست ہے۔

 راجہ یاسر ہمایوں  پوٹوہار ریجن کے ضلع سے تعلق رکھتے ہیں جہاں پی ٹی آئی نے 2018ء کے عام انتخابات میں سب سے زیادہ ووٹ حاصل کیے ہیں۔ انہیں عمران خان کا قریبی ساتھی سمجھا جاتا ہے اور ان کا نام بطور وزیراعلیٰ پنجاب کے طور پر میڈیا میں آ رہا ہے۔

پی ٹی آئی کی جانب سے وزیراعلیٰ کے نام کا اعلان کسی وقت بھی کیا جاسکتا ہے،   عمران خان کسی وقت بھی پنجاب کے  قائد ایوان کے نام کا اعلان صوبائی پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں  کرسکتے ہیں جبکہ اجلاس میں اسپیکراورڈپٹی اسپیکرکےناموں کا فیصلہ بھی کیے جانے کی توقع کی جا رہی ہے۔

 

 

چکوال سے پی پی 21؍ کی نشست سے الیکشن جیتنے والے پی ٹی آئی کے رکن صوبائی اسمبلی راجہ یاسر ہمایوں نے کہا ہے کہ اگر پارٹی چیئرمین عمران خان نے انہیں صوبے کی وزارت اعلیٰ کے عہدے کیلئے منتخب کیا تو یہ ان کیلئے باعث فخر بات ہوگی۔

راجہ یاسر کا کہنا تھا کہ ان کا خاندان 1929ء سے سیاست میں فعال کردار ادا کر رہا ہے، ان کے دادا قانون ساز اسمبلی کے رکن رہ چکے ہیں جبکہ خاندان کے دیگر ارکان بھی چکوال سے سیاست کا حصہ رہے ہیں۔ وہ 2014ء کے دھرنے میں بھی سرگرم رہ چکے ہیں۔

راجا یاسر کا کہنا تھا کہ انہیں پارٹی چیئرمین نے اس ضمن میں آگاہ نہیں کیا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ حال ہی میں پارٹی چیئرمین سے ملاقات میں انہوں نے صرف تعلیمی پالیسی پر بات کی تھی، تاہم ان کا کہنا تھا کہ اگر عمران خان انہیں صوبے کی یہ اہم ذمہ داری سونپے گےتو یہ ان کے لیے باعث افتخار ہوگا۔



متعللقہ خبریں