احسن اقبال کی چیف جسٹس پرچڑھائی کی ویڈیو نے دھوم مچادی، چیف جسٹس نے نوٹس لے لیا۔ کلک کیجیے

احسن اقبال نے کہا کہ پاکستان نے معاشی ترقی کے دو کیچ چھوڑ دیئے، 60 کی دہائی میں ترقی کا سفر روک دیا گیا اور 90 کی دہائی میں معاشی اصلاحات کا سفر روک دیا گیا۔ احسن اقبال کی چیف جسٹس پرچڑھائی کی ویڈیو نے دھوم مچادی

احسن اقبال کی چیف جسٹس پرچڑھائی کی ویڈیو نے دھوم مچادی،  چیف جسٹس  نے نوٹس لے لیا۔ کلک کیجیے
وفاقی وزیر احسن اقبال کی چیف جسٹس پر چڑھائی  نے دھوم مچادی - کلک کیجیے
وفاقی وزیر احسن اقبال کی چیف جسٹس پر چڑھائی نے دھوم مچادی - کلک کیجیے

وفاقی وزیر احسن اقبال کی چیف جسٹس پر چڑھائی  نے دھوم مچادی - کلک کیجیے

وزیر داخلہ احسن اقبال نے اسلام آباد میں سیمینار سے خطاب کرتے ہوئےکہا ہے کہ   سیاسی رہنما  بھی اتنے ہی سچے اور کھرے محب وطن ہیں جتنے جج اور فوجی  حضرات ہیں۔

انہوں نے کہا کہ   پاکستان   ترقی کی راہ پر گامزن ہے لیکن جان بوجھ کر  اسی راہ میں رکاوٹیں کھری کی جا رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ  پاکستان نے معاشی ترقی کے دو کیچ چھوڑ دیئے، 60 کی دہائی میں ترقی کا سفر روک دیا گیا اور 90 کی دہائی میں معاشی اصلاحات کا سفر روک دیا گیا، دنیا کا شاید ہی کوئی ملک ہو جو سی پیک میں سرمایہ کاری کا نہ سوچ رہا ہو، امریکا اور یورپ سب سی پیک میں سرمایہ کاری کرنا چاہتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ  گوادر کا ماسٹر پلان ہانگ کانگ سے بھی بہتر بنایا جائے گا تاہم عقل کے اندھوں کو کون سمجھائے کہ ترقی رابطوں سے ہوتی ہے، سڑک ہوگی تو پڑھنے کے لیے جاسکیں گے۔

ملک میں سیاسی انتژار پیدا کرنے کے لیے  بلوچستان اور جنوبی پنجاب میں خود ساختہ پیٹریاٹ گروپ بنائے جا رہے ہیں، پیٹریاٹ گروپ کا سکہ اور اب ایم ایم اے کا خیال پرانا ہوچکا۔ انہوں نے کہا کہ ہم بھی پاکستان کے ساتھ مخلص اور پیار کرتے ہیں،ہماری بھی عزت ہے،جتنا کوئی فوجی محب وطن ہے اتنے سیاست دان بھی ہیں، اگر کوئی جج محب وطن ہے تو سیاست دان بھی محب وطن ہیں۔

ا حسن اقبال نے کہا کہ اگر چیف جسٹس کی توہین ہوتی ہے تو میری بھی توہین ہوتی ہے، اگر میں نے کسی کو غلط لگادیا تو ثبوت دیں توہین نہ کریں، چیف جسٹس کو گالیاں دینے کا اختیار نہیں ہے۔



متعللقہ خبریں