شریف برادران اور داماد صفدر کے خلاف توہین عدالت درخواست خارج

درخواست گزار کے بیانات زیادہ تر جے آَئی ٹی پر نکتہ چینی سے متعلق ہونے پر چیف جسٹس نے اس مقدمے کو خارج کر دیا ہے

شریف برادران اور داماد صفدر کے خلاف توہین عدالت درخواست خارج

پاکستان کی عدالت عظمیٰ نے سابق وزیر اعظم نوازشریف، شہباز شریف اور  صفدر کے خلاف توہین عدالت کی درخواست خارج کر دی گئی۔

ذرائع کے مطابق سپریم کورٹ میں سابق وزیر اعظم نوازشریف، وزیراعلی پنجاب شہباز شریف اورکیپٹن (ر) صفدر کے خلاف توہین عدالت کیس کی سماعت ہوئی، جس دوران   اس کیس کو خارج کر دیا گیا۔

سماعت کے دوران درخواست گزار نے اپنے بیان میں کہا کہ معززعدالت کا فیصلہ آیا تو نوازشریف جلوس کی شکل میں روانہ ہوا، ہر جگہ نوازشریف عدالت کے فیصلے پر تقر یریں کرتے رہے، انہوں نے کہا کہ یہ احتساب نہیں مذاق ہے، نوازشریف نے جے آئی ٹی پرتنقید کی۔

جس پر چیف جسٹس  نے کہا  کہ جوبیانات آپ  دے رہے ہیں  ہیں وہ جے آئی ٹی سے متعلق ہیں، لیکن  ہمارے پاس موجود  بیانات  اس سے ہٹ کر ہیں ، مناسب وقت پر اس  مقدمے   کو مقرر کریں گے۔

دوسری جانب عدالت نے دانیال عزیز، طلال چوہدری، خواجہ سعد رفیق، نیربخاری، فردوس عاشق اعوان اور یوسف رضاگیلانی کے خلاف بھی توہین عدالت کی درخواست غیرمؤثر قرار دے کرنمٹادیں۔

 



متعللقہ خبریں