سینیٹ چئیرمین کے لیے ظفرالحق اورصادق سنجرانی اورڈپٹی چئیرمین کے لیےعثمان کاکڑاورسلیم مانڈی والانامزد

قبل ازیں مسلم لیگ ن اور اتحادیوں کی جانب سے مشاہد اللہ خان یا نیشنل پارٹی کے میرحاصل بزنجو کو چیئرمین اور نزہت صادق کو ڈپٹی چیئرمین نامزد کیے جانے کاامکان ظاہر کیا گیا تھا

سینیٹ چئیرمین کے لیے ظفرالحق اورصادق سنجرانی اورڈپٹی چئیرمین کے لیےعثمان کاکڑاورسلیم مانڈی والانامزد

مسلم لیگ (ن) اور اس کی اتحادی جماعتوں نے چیئرمین سینیٹ کے لیے راجہ ظفرالحق جب کہ ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کے لیے عثمان کاکڑ کو امیدوار نامزد کردیا ہے۔

اسلام آباد میں چوہدری منیر کی رہائش گاہ پر مسلم لیگ (ن) کے تاحیات قائد نواز شریف کی سربراہی میں اجلاس ہوا جس میں مشاہد حسین سید، پرویز رشید، امیر مقام، دانیال عزیز، راجہ ظفر الحق، وزیراعظم شاہد خاقان عباسی، گورنر کے پی کے اقبال ظفر جھگڑا اور گورنر سندھ محمد زبیر سمیت دیگر پارٹی رہنماؤں نے شرکت کی۔

قبل ازیں مسلم لیگ ن اور اتحادیوں کی جانب سے مشاہد اللہ خان یا نیشنل پارٹی کے میرحاصل بزنجو کو چیئرمین اور نزہت صادق کو ڈپٹی چیئرمین نامزد کیے جانے کاامکان ظاہر کیا گیا تھا۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مشاہد اللہ خان نے کہاکہ سابق وزیراعظم نوازشریف نے چیئرمین سینیٹ کیلئے راجہ ظفرالحق کو امیدوار نامزد کیا ہے جبکہ محمود خان اچکزئی اور اتحادی جماعتوں نے ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کیلئے عثمان کاکڑ کو امیدوار نامزد کیا ہے ۔
مشاہد اللہ خان کا کہناتھا کہ چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کیلئے ہمارے نمبر ز پورے ہیں۔ان کا کہناتھا کہ آج جمہوری قوتیں ایک طرف اور غیر جمہوری قوتیں دوسری طرف ہیں۔

مشاہد اللہ خان نے کہا کہ عمران خان پہلے دن سے امپائرکی انگلی کی سیاست کررہے ہیں،آصف زرداری نے پیپلزپارٹی کی سیاست پردھبہ لگایا،مشاہد اللہ خان نے کہا کہ ایم کیو ایم نے تاحال کوئی فیصلہ نہیں کیا ہے ۔

دریں اثنا چیئرمین سینیٹ کے لیے پیپلزپارٹی کا بلوچستان آزاد گروپ کے صادق سنجرانی کی حمایت کا اعلان جبکہ ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کے لیے سلیم مانڈوی والا کا نام پیش کیاگیا ۔ تحریک انصاف نے دونوں کی حمایت کر دی ۔

ہمیں جماعت اسلامی اور اے این پی کی حمایت حاصل ہے  جب کہ ایم کیو ایم نے ابھی ہماری حمایت کا اعلان نہیں کیا۔ انہوں نے کہا کہ آج جمہوری قوتیں ایک طرف اور غیر جمہوری قوتیں دوسری طرف ہیں۔

 



متعللقہ خبریں