فلسطینی  انتظامیہ کی حماس کی مذمت سے متعلق قرارداد کو مسترد کرنے کی اپیل

فلسطین کی سرکاری خبر ایجنسی WAFA کی خبر کے مطابق فلسطینی انتظامیہ کی جانب سے جاری کرے تحریری اعلامیے میں قراردادکو منظور ہونے سے روکنے کیلئے عرب اور اسلامی ممالک کے علاوہ دوست ممالک کے ساتھ بھی قریبی رابطہ قائم ہونے سے آگاہ کیا گیا ہے

فلسطینی  انتظامیہ  کی حماس کی مذمت سے متعلق قرارداد کو مسترد کرنے کی اپیل

فلسطینی  انتظامیہ نے اقوام متحدہ کے رکن ممالک سے امریکہ کی جانب سے حماس کی مذمت کرنے سے متعلق قرارداد کو مسترد کرنے کی اپیل کی ہے۔

 فلسطین کی سرکاری خبر ایجنسی WAFA کی خبر کے مطابق فلسطینی انتظامیہ کی جانب سے جاری کرے تحریری اعلامیے میں قراردادکو منظور ہونے سے روکنے کیلئے عرب اور اسلامی ممالک کے علاوہ دوست ممالک کے ساتھ بھی قریبی رابطہ قائم ہونے سے آگاہ کیا گیا ہے۔

 فلسطینیوں کے گروپ نے بھی امریکہ کے اس فیصلے کی مذمت کی ہے۔

 حماس کی مذمت کرنے سے متعلق قرارداد کے بارے میں اقوام متحدہ کی غزہ میں موجود آفس کے سامنے مظاہرہ کیا گیا۔

اس پریس کانفرنس میں فلسطینی گروپ کی نمائندگی کرتے ہوئے یوسریٰ  درویش نے کہا کہ فلسطینیوں کے حقوق غضب کیے جا رہے ہیں اور اس پر خاموشی اختیار نہیں کی جاسکتی ہے۔

 انہوں نے کہا کہ امریکی انتظامیہ جان بوجھ کر اس معاملے پر خاموشی اختیار کیے ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جدوجہد آزادی کو دہشت گردی کا نام نہیں دیا جاسکتا اور ہم بھی دنیا کو اپنی آزادی سے متعلق آگاہ کرنا چاہتے ہیں اور اسی کے لیے اپنی جدوجہد جاری رکھے ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ فلسطینیوں کو اپنے اوپر ہونے والے مظالم کے خلاف آواز بلند کرنے کا پورا پورا حق حاصل ہے ۔

امریکہ کی جانب سے پیش کی جانے والی اس  قرارداد  پر جنرل اسمبلی کے اجلاس میں راۓشماری کروانے کی  توقع کی جا رہی ہے۔

اگر اس قرارداد کو منظور کر لیا گیا تو اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی پہلی بار مذمتی قرارداد منظور کرے گی۔



متعللقہ خبریں