جنیوا یمن مذاکرات کا انعقاد معطل،حوثی لیڈروں کومنانےکی کوششیں

اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی برائے یمن مارٹن گریفتھس نے آج  جنیوا میں یمن میں جاری بحران سے متعلق فریقوں کے درمیان ہونے والے مذاکرات منسوخ کرنے کا اعلان کردیا ہے

جنیوا  یمن مذاکرات کا انعقاد معطل،حوثی لیڈروں کومنانےکی کوششیں

اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی برائے یمن مارٹن گریفتھس نے آج  جنیوا میں یمن میں جاری بحران سے متعلق فریقوں کے درمیان ہونے والے مذاکرات منسوخ کرنے کا اعلان کردیا ہے۔

اقوام متحدہ کے ایلچی نے گزشتہ  شام ایک بیان میں یمنی حکومت اور حوثی ملیشیا کے وفود کے درمیان ہونے والی بات چیت منسوخ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

قبل ازیں یمنی وزیر خارجہ خالد الیمانی نے کہا تھا کہ جنیوا مذاکرات میں حکومت کی جانب سے شرکت یا عدم شرکت کا فیصلہ آئندہ چند گھنٹے میں کر لیا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ حوثی ملیشیا کے  لیڈروں میں اختلافات پائے جاتے ہیں لیکن یمن کی قانونی حکومت ہمیشہ کے لیے حوثیوں کے فیصلے کا انتظار نہیں کرے گی کہ وہ کب مذاکرات میں شرکت یا عدم شرکت کا فیصلہ کرتے ہیں۔

 یاد رہے کہ انھوں نے اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی برائے یمن مارٹن گریفتھس سے جنیوا میں اپنے زیر قیادت یمنی حکومت کے وفدکے ساتھ ملاقات کی تھی ۔

عالمی ایلچی نے یمن میں جاری بحران کے حل کے لیے مجوزہ مشاورتی عمل سے وابستہ توقعات، امن عمل سے متعلق امور بالخصوص اعتماد کی فضا بحال کرنے کے اقدامات کے بارے میں تبادلہ خیال کیا تھا



متعللقہ خبریں