یمن: اسکول بس پر حملہ بیسیوں ہلاک

یمن کی شمالی تحصیل سادا  میں ایک اسکول کے بچوں کی بس  پر حملے میں بیسیوں افراد ہلاک اور زخمی ہو گئے

یمن: اسکول بس پر حملہ بیسیوں ہلاک

یمن کی شمالی تحصیل سادا  میں ایک اسکول کے بچوں کی بس  پر حملے میں بیسیوں افراد ہلاک اور زخمی ہو گئے ہیں۔

بین الاقوامی ریڈ کراس  کمیٹیICRC  کی طرف سے ٹویٹر پیج سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ سادا کے  شمال میں واقع شہر داہیان  کے بازار میں بچوں کی بس پر حملہ کیا گیا۔

بیان کے مطابق حملے کے بعد ICRCکے ہسپتال میں بیسیوں لاشوں اور زخمیوں کو لایا گیا۔ بیان میں انسانی حقوق  کے قوانین کی رُو سے  جھڑپوں والے علاقوں میں شہریوں کو تحفظ دینے کی بھی اپیل کی گئی ہے۔

ICRC کے بیان میں اس بارے میں کوئی معلومات فراہم نہیں کی گئیں کہ حملہ کیسے اور کس کی طرف سے کیا گیا ہے۔

دوسری طرف حوثیو ں نے دعوی کیا ہے  کہ اس حملے کی ذمہ دار سعودی زیر قیادت کولیشن فورسز ہیں۔

حوثیوں کے ترجمان محمد عبدالسلام  کے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ سعودی اور امریکی طیاروں  نے آج صبح تحصیل سادا کے وسطی شہر داہیان میں ایک اسکول کے  بچوں کی بس کو ہدف بنا کر مکروہ  قتل عام کیا ہے۔

عبدالسلام کے مطابق حملے کے نتیجے میں طالبعلم بچوں اور شہریوں  پر مشتمل   بیسیوں افراد  ہلاک اور زخمی ہو گئے ہیں۔

واضح رہے کہ یمن میں حوثی منتخب انتظامیہ پر  حملوں کا سلسلہ جاری رکھے ہوئے ہیں اور ستمبر 2014 سے لے کر اب تک دارالحکومت صنعا سمیت بعض علاقوں پر قبضہ کئے ہوئے ہیں۔

سعودی زیر قیادت کولیشن فورسز  بھی مارچ 2015 سے لے کر اب تک حوثیوں کے مقابل منتخب انتظامیہ  سے منسلک فورسز کو تعاون فراہم کر رہی ہیں۔



متعللقہ خبریں