ترکی کے اخًارات سے جھلکیاں - 11.02.2019

ترک ذرائع ابلاغ

ترکی کے اخًارات سے جھلکیاں  - 11.02.2019

*** روزنامہ خبر ترک:  "اتا ترک ثقافتی مرکز کی سنگ بنیاد"

 استنبول میں تقسیم کے علاقے میں اتا ترک  ثقافتی مرکز کی سنگ بنیاد کی تقریب میں شرکت کرتے ہوئے صدر رجب طیب ایردوان نے کہا ہے کہ   اتاترک ثقافتی مرکز ترکی کی ثقافتی تاریخ میں ایک نے باب  کا اضافہ ہوگا۔ صدر ایردوان استنبول کے علاقے تقسیم میں منعقد ہونے والی سنگ بنیاد رکھنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اتاترک ثقافتی مرکز 95 ہزار 600 مربع میٹر کورڈ ایریا پر محیط ہوگا جسے پانچ مختلف بلاکوں میں تقسیم کیا جائے گا، ثقافتی مرکز کو دو سال کے مختصر عرصے میں مکمل کرتے ہوئے اس کے دروازے عوام کے لئے کھول دیے جائیں گے۔

 

***روزنامہ  وطن:  "ترکی اور روس بڑے پیمانے پر مشترکہ پارٹنرشپ کریں گے"

  ترک-روس مشترکہ یونیورسٹی  کی تفصیلات سامنے آنا شروع ہو گئی ہیں۔ صدر رجب طیب ایردوان کی ماہ اپریل  میں صدر  پوتین سے ہونے والی ملاقات میں ترک روس یونیورسٹی کے قیام کے بارے میں مذاکرات کیے جانے کی توقع کی جا رہی ہے۔ دونوں ممالک کے درمیان قائم کی جانے والی مشترکہ یونیورسٹی  کے لیے جگہ کا انتخاب استنبول یا پھر انطالیہ  میں سے کیا جائے گا۔

 

***روزنامہ  حریت:  "استنبول ایئرپورٹ پر سات ملین نو لاکھ 68 ہزار 882  کی مہمانداری"

سن 2019 کے ماہ جنوری میں اندروں ملک اور  بیرون ملک آنے  والی پروازوں  کی تعداد میں گزشتہ سال کے اسی عرصے کے  مقابلے میں   ایک ہزار  68 پروازوں  میں اضافہ ہوتے ہوئے56 ہزار  420 تک پہنچ گئی ہیں اور اسی عرصے کے دوران مسافروں کی تعداد سات ملین نولاکھ  68 ہزار 882 پہنچ گئی ہے۔

 

***روزنامہ سٹار:  "ڈرائی فروٹ کی برآمدات  ایک بلین 388  ملین  ڈالر تک پہنچ گئی" 

ترکی کی ڈرائی فروٹ کی برآمدات میں سن  2018 میں 8.5 فیصد ہوتے ہوئے ایک بلین 279 ملین  ڈالر سے  ایک بلین   388 ملین  ڈالر تک پہنچ گئی ہے۔  سب سے زیادہ ڈرائی فروٹ  جرمنی کو 178 ملین ڈالر کابرآمد  کیا گیا اس کے بعد 164 ملین ڈالر سے برطانیہ ایک سو دو ملین ڈالر سے اٹلی کا نمبر آتا ہے۔  ترکی 143  ممالک کو ڈرائی  فروٹ برآمد کرتا ہے۔

 

***روزنامہ ینی شفق:  "پھولوں والوں کا سن 2019 کا اہدف 85: ممالک کو پھولوں کی برآمدات"

گزشتہ سال ترکی نے 100 ملین ڈالر کے پھول برآمد کیے جبکہ سال 2019 تک  85 ممالک تک رسائی حاصل کرتے ہوئے 125 ملین ڈالر کا  ہدف مقرر کیا گیا ہے۔ وسطی اناطولیہ پھولوں کی انجمن کے چیئرمین اسماعیل یلماز  نے کہا ہے کہ ترکی کے پھولوں کے لحاظ سے سب سے اہم ملک ہالینڈ اور برطانیہ  ہیں  جبکہ حالیہ کچھ عرصے سے ازبکستان میں بھی  پھولوں کی مانگ میں اضافہ ہوا ہے ۔

 

 



متعللقہ خبریں