اخبارات کی جھلکیاں

12/09/18

اخبارات کی جھلکیاں

*** روزنامہ  خبر ترک نے   وزیر خارجہ  مولود چاوش اولو کے بیان کو جگہ دی ہے جس میں انہوں نے کہا کہ  شام کی صورت حال  پر بیشتر ممالک ترکی  سے اتفاق رکھتےہوئے  ۔انہوں نے یہ بات  ترک۔رومانیہ اور پولستانی وزرائے خارجہ  کے مشترکہ اجلاس کے بعد ایک اخباری کانفرنس کے  دوران کہی ۔ انہوں نے کہا  کہ  ادلب پر اسد انتظامیہ اور روس کے حملے جاری ہیں ،ہماری طرف سے  ایک کھلی پیشکش ہے کہ ادلب میں جنگ بندی  فوری طور پر ممکن بن سکے   اور وہاں موجود دہشتگرد عناصر کے خاتمے کےلیے مل کر  آپریشن کریں۔

 

***"  ترک دفتر خارجہ     کا  امریکہ سے احتجاج"  یہ سرخی روزنامہ ینی  شفق نے لگاتے ہوئے    لکھاہے کہ دفتر خارجہ کے ترجمان حامی اکسوئے نے  امریکی انتظامیہ کی طرف سے واشنگٹن میں تنظیم آزادی فلسطین  کا دفتر بند کرنے  کے فیصلے    کی مذمت کی ہے ۔ دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ  یہ فیصلہ  مشرق وسطی  امن    مذاکراتی  عمل کو نقصان پہنچائے گا  اور   ترکی فلسطینی عوام کے  حقوق  کا  دفاع کرنا جاری رکھے گا۔

 

*** روزنامہ وطن  نے خبر دی ہے کہ   شامی سرحد سے ملحقہ ترک شہر شانلی عرفا کے قصبے  جیلان پنار  کی ایک چوٹی پر   طویل  ترک پرچم  لہرایا گیا ہے ۔اس سلسلے میں ایک تقریب کا اہتمام کیا گیا جس میں  بلدیہ کے ناظم  مندریس اتیلا ،انصاف و ترقی  پارٹی کے مقامی  صدر  خالد شیمشیک  اور دیگر افراد نے  شرکت کی ۔

 

 

*** روزنامہ صباح کے مطابق ،  ترکی کا تیار کردہ ہیلی کاپٹر  ٹی  625        اس بات کا ثبوت ہے کہ  ترک دفاعی صنعت جدید دنیا  کے شانہ بشانہ  اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوانے کے قابل ہو گئی ہے ۔

 


ٹیگز: اخبارات

متعللقہ خبریں