ترکی کے اخبارات سے جھلکیاں - 10.08.2018

ترک ذرائع ابلاغ

ترکی کے اخبارات سے جھلکیاں - 10.08.2018

*** روزنامہ    خبر ترک " اقوام متحدہ  کی جانب  سے ترکی  کے بارے میں بیان"  کے زیر عنوان اپنی خبر  لکھا ہے کہ  اقوام متحدہ  میں  شام کے امور کے مشیر  جان ایگے لینڈ  نے کہا ہے کہ شام کے شہر ادلب میں لاکھوں شہریوں کی جانوں کو خطرہ لاحق  ہے۔انہوں نے کہا کہ  ادلب میں ہر  ممکنہ جھڑپ  کے سد باب کے لئے ترکی، روس اور ایران باہمی تعاون کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ضرورت محسوس ہونے پر وہ ترکی سے اپیل کریں گے اور  ترک انتظامیہ   علاقے سے فرار ہونے والے   سویلین   کے لیے سرحدی چوکیوں  کو کھولنے کا مطالبہ  بھی کرسکتے ہیں۔

 

***روزنامہ  حریت نے " استنبول کے نئے  ہوائی اڈے سے پہلی پرواز کے شیڈول کا اعلان"  کی سرخی کے تحت اپنی خبر میں لکھا ہے کہ  استنبول کے نئے ہوائی اڈے  سے پہلی پرواز اور  اس کے روٹ کو وضح کرلیا گیا ہے۔  اخبار  کے مطابق ہوائی اڈے  کے   95فیصد  حصے کو مکمل  کرلیا گیا ہے اور  اب 29 اکتوبر کو ہوائی اڈے کی تمام تنصیبات کو نئے ہوائی اڈے کو منتقل کردی جائیں گے۔  استنبول کے ہوائی اڈے سے پہلی پرواز   31 اکتوبر  2018 کو  دارالحکومت  انقرہ  کے لیے   روانہ ہوگی جبکہ پہلی بین الاقوامی پرواز     شمالی قبرصی ترک جمہوریہ اور آذربائیجان کے لیے   روانہ ہوگی۔

 

***روزنامہ صباح ٹرکش ائیر لائین  کا اہم اقدام" کے زیر عنوان اپنی خبر میں لکھا ہے کہ ٹرکش ائیر لائین   میں سفر کرنے والے مسافروں کی تعداد میں  مسلسل اضافہ ہو تا جا رہا ہے۔  اخبار کے مطابق     جنوری  تا جولائی  2018 میں  جنوری  تا جولائی 2017ء کے مقابلے میں  پندرہ فیصد اضافہ ہوتے  ہوئے  ہوئے مسافروں کی تعداد   43.2 ملین   تک پہنچ گئی ہے۔ مسافروں کی تعداد میں اضافہ   اندورنی پروازوں کے دوران  17 فیصد اور بیروانی پروازوں کے دوران 13 فیصد ہوا ہے۔

 

***روزنامہ    سٹار نے "  ایس ایس بی اور  اسیلسان  کے درمیان  نئے  پرواجیکٹ سے  متعلق سمجھوتہ" کے زیر عنوان اپنی خبر میں لکھا ہے کہ  ترکی نے  مقامی سطح پر  اپنے دفاعی صنعت کو فروغ دینے کے لیے   نئے منصوبوں کو عملہ جامہ پہنانے کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے اور  اس طرح    ترکی کے دفاعی صنعت  کے محکمے  ایس ایس بی اور   دفاعی  ادارے   اسیلسان   کے درمیان طے پانے والے سمجھوتے کی رو سے چار جدید  طیارے   تیار کیے جائیں گے۔  یہ  طیارے  جنگ  کے دوران استعمال کیے جانے کے ساتھ ساتھ زمانہ امن بھی مختلف مقاصد کے لیے استعمال کیے جائیں گے۔

 

***روزنامہ  ینی شفق  نے " دنیا کے قدیم ترین عاشقوں  کےزیورات" کے زیر عنوان اپنی خبر میں لکھا ہے کہ  ماردین کے علاقے    "دار گیچت" میں کی جانے والی کھدئی کے دوران   آٹھ ہزار سال قبل مسیح دور کی لحد سے  دنیا کے قدیم ترین عاشقوں  کے زیورات برآمد ہوئے ہیں  جنہیں ماردین کے عجائب گھر میں نمائش کے لے رکھا  گیا ہے۔  

 



متعللقہ خبریں