صدر ترکی کے عالمی سربراہان کو سال نو کے پیغامات

پیچھے چھوڑا گیا سال ترکی  اور امریکہ کے درمیان پیش آنے والی مشکلات کو دُور  کرنے اور باہمی  تعلقات کو حق بجانب سطح تک  پہنچانے کی دو طرفہ کوششوں کا ایک سال ثابت ہوا ہے

صدر ترکی کے عالمی سربراہان کو سال نو کے پیغامات

صدر رجب طیب ایردوان نے عالمی سربراہان  کو سال ِ نو کا پیغام بھیجا ہے۔

جناب ایردوان نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے  لیے "محترم صدر ، معزز دوست"   کے عنوان سے اپنے تہنیتی پیغام میں کہا  ہے کہ پیچھے چھوڑا گیا سال ترکی  اور امریکہ کے درمیان پیش آنے والی مشکلات کو دُور  کرنے اور باہمی  تعلقات کو حق بجانب سطح تک  پہنچانے کی دو طرفہ کوششوں کا ایک سال ثابت ہوا ہے۔

صدر ترکی  نے لکھا ہے کہ " مجھے پورا یقین ہے کہ دو طرفہ احترام و اخلاص  کے حامل  ڈائیلاگ پر مبنی  باہمی تعلقات اور  سٹریٹیجک شراکت داری  کو مطلوبہ سطح تک پہنچایا جائیگا   اور باہمی تعاون کا مستقبل اب کے بعد کہیں زیادہ تابناک ہو گا۔ کئی ایک مشترکہ امتحانات کا سامنا ہونے والے بین الاقوامی ماحول میں  ترک۔ امریکی تعاون سے  عالمی امن و استحکام   میں ہم دونوں ممالک  اہم سطح کی خدمات  ادا  کرنے کے قابل ہیں۔  میں آپ کو سال ِ نو کی دلی مبارکباد پیش کرتا ہوں، آپ اور دوست امریکی عوام کی اچھی صحت و خوشحالی کا دعا گو ہوں۔"

صدر ایردوان نے اپنے روسی ہم منصب ولا دیمر پوتن  کو روانہ کردہ سالِ نو کے پیغام میں ترکی  اور روس کے باہمی تعلقات کی اہمیت پر توجہ مبذول کراتے ہوئے  آئندہ برس بھی ان روابط کے مزید مضبوطی کے ساتھ آگے بڑھنے کی تمنا کا اظہار کیا ہے۔

انہوں نے برطانوی وزیر اعظم تھریسا مئے کے لیے  اپنے تحریری پیغام میں   کہا ہے کہ گزشتہ برس  ترکی اور برطانیہ کے  باہمی تعاون اور ہماری مشترکہ کوششوں  کے مضبوطی حاصل کرنے والا ایک سال ثابت ہوا ہے۔

جناب ایردوان نے فرانسیسی صدر امینول ماکرون کے لیے اپنے پیغام میں اس یقین  کا اظہار کیا ہے کہ آئندہ برس دو طرفہ احترام و  اخلاص کے دائرہ عمل میں  ڈائیلاگ پر  مبنی  باہمی تعلقات کو مشترکہ جدوجہد کی بدولت مزید آگے بڑھایا جائیگا۔

انہوں نے کہا ہے کہ خطہ یورپ اور مشرق وسطی ٰ میں در پیش امتحانات  کےسامنے ترک ۔ فرانسیسی  تعاون  امن و استحکام کے قیام میں معاون ہونے کے عمل  کو آئندہ بھی جاری رکھے گا ،   میں صدر ِ فرانس اور فرانسیسی عوام کو نئے سال کی مبارکباد پیش کرتا ہوں۔

صدر ِ ترکی  نے محترم صدر و دوست کی شروعات کے ساتھ عوامی جمہوریہ چین کے صدرِ مملکت شی جن پنگ کو نئے سال کی مبارکباد  دیتے ہوئے  کہا ہے کہ مجھے دلی مسرت ہے کہ چین اور ترکی کے باہمی تعلقات میں  ہر  شعبے میں تقویت رہی ہے۔

انہوں نے بھارتی وزیر اعظم نریندرا مودی کے  نام پر اپنے پیغام میں لکھا ہے کہ"آپ کے خوبصورت ملک  کے دورے  کی یادیں  اپنی تمام تر رعنائیوں کے ساتھ میرے ذہن میں نشین ہیں۔ "

ترکی۔ بھارت تعلقات کے  بتدریج ہر شعبے میں آگے بڑھنے پر اپنی ممنونیت کا اظہار کرنے والے  جانب ایردوا ن نے اپنے پیغام میں  کہا ہے کہ "میں  سمجھتا ہوں کہ   ماضی سے چلے آنے والی دوستی کے روابط مزید تقویت پائیں  گے،  جو کہ  دونوں  اقوام کے مشترکہ مفادات   کے لیے بار آور ثابت ہوں گے، میری جانب سے  آپ کو اور دوست ہندوستانی عوام  کو سالِ نو مبارک ہو۔"

 

 



متعللقہ خبریں