چین نے اسکائی اسکریپروں کی تعمیر میں یورپ اور امریکہ کو پیچھے چھوڑ دیا

چین نے سال 2018 میں 88 اسکائی اسکریپر تعمیر کر کے عالمی اسکائی اسکریپر عمارتوں کی تعداد  کے حوالے سے یورپ اور امریکہ کو پیچھے چھوڑ دیا

چین نے اسکائی اسکریپروں کی تعمیر میں یورپ اور امریکہ کو پیچھے چھوڑ دیا

چین نے سال 2018 میں 88 اسکائی اسکریپر تعمیر کر کے عالمی اسکائی اسکریپر عمارتوں کی تعداد  کے حوالے سے یورپ اور امریکہ کو پیچھے چھوڑ دیا  ہے۔

بلند عمارتوں اور اربن لائف کونسل کے سال 2018 کے اعداد و شمار کے مطابق دنیا بھر میں سال 2018 میں 200 میٹر اور اس سے زائد بلندی والے 143 اسکائی اسکریپر تعمیر کئے گئے جن میں 88 اسکائی اسکریپروں کے ساتھ چین پہلے نمبر پر رہا۔

رواں سال میں دارالحکومت بیجنگ میں سیٹک ٹاور تعمیر کیا گیا جو دنیا کا بلند ترین اسکائی اسکریپر تھا۔

ایک سو آٹھ منزلہ اس عمارت کی بلندی 528 میٹر  ہے۔

چین کے بعد ویت نام کا اسکائی اسکریپر 469.5 میٹر بلندی کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہا۔

چین  کے کُل 88 اسکائی اسکریپروں کے بعد 13 عمارتوں کے ساتھ امریکہ دوسرے اور 10 عمارتوں کے ساتھ متحدہ عرب امارات تیسرے نمبر پر رہیں۔

 



متعللقہ خبریں