بھارت: سردار ولبھ بھائی پٹیل  کے مجسمے کا  افتتاح کر دیا گیا

بھارت کی  آزادی کے رہنما سردار ولبھ بھائی پٹیل  کے مجسمے کا  افتتاح کر دیا گیا

hindistan patel heykel2.jpg
hindistan patel heykel1.jpg

بھارت کی  آزادی کے رہنما سردار ولبھ بھائی پٹیل  کے مجسمے کا  افتتاح کر دیا گیا۔

کانسی کا یہ مجسمہ صوبہ گجرات کے گاوں کیوادیہ میں بنایا گیا ہے، اس کی طوالت 182 میٹر  اور مالیت 403 ملین ڈالر ہے۔

مجسمے کا افتتاح بھارت کے وزیر اعظم نریندر مودی نے کیا اور افتتاح کے دوران بھارتی فضائیہ کے طیاروں نے مجسمے پر  پھول برسائے۔

بھارتی مجسمہ ساز رام وی سوتار  کا فن پارہ یہ مجسمہ اپنے بھاری مصارف کی وجہ سے سخت تنقید کا نشانہ بنتا رہا  تاہم  تنقید کے باوجود نریندر مودی نے اس کی تعمیر کا کام جاری رکھوایا۔

مودی بھی پٹیل  کی طرح گجرات میں پیدا ہوئے اور ان کا کہنا ہے کہ پٹیل بحرانی دور میں بھارت کے لئے مشعل راہ بنے اور مستقبل کی نسلوں کے لئے بھی ذریعہ الہام ہوں گے۔

مقامی ذرائع ابلاغ کے مطابق کل  افتتاحی تقریب کے لئے علاقے میں ہزاروں پولیس اہلکاروں کو متعین کیا گیا اور احتجاجی مظاہرہ کرنے والے کسانوں اور ایکٹیوسٹوں  کو حراست میں لے لیا گیا ۔

امریکہ کے مجسمہ آزادی سے دو گنا  بلند اس مجسمے کے ساتھ پٹیل کی زندگی  و خدمات کے تحقیقی مرکز اور 2 ہزار تصاویر  اور 40 ہزار دستاویزات  کا ایک عجائب گھر بھی  تعمیر کیا جائے گا۔

توقع ہے کہ اس مجسمے کو دیکھنے کے لئے سالانہ اڑھائی ملین سیاح بھارت کا رُخ کریں گے۔

واضح رہے کہ سردار پٹیل کو" بھارت کا آئرن مین "بھی کہا جاتا ہے وہ 1947 میں  برطانوی استبداد سے   آزادی  کے بعد بھارت  کے پہلے وزیر وزیر داخلہ منتخب ہوئے اور آزادی کے بعد کے دور میں انہوں نے مختلف صوبوں  کے باہمی اتحاد میں اہم کردار ادا کیا۔



متعللقہ خبریں