امریکی فوج کا نصف ایک سال کے اندر کسی بڑی جنگ کے چھڑنے کی سوچ رکھتا ہے

روزنامہ ملٹری  نے اسی موضوع پر سال 2017 میں بھی ایک سروے کرایا تھا، جس میں یہ شرح 5 فیصد تک تھی

امریکی فوج کا نصف ایک سال کے اندر کسی بڑی جنگ کے چھڑنے کی سوچ رکھتا ہے

امریکی فوجیوں کا 46 فیصد  ایک سال کے اندر کسی بڑی جنگ  کا حصہ بننے کی سوچ رکھتا ہے۔

امریکی مسلح افواج کے ملازمین کے درمیان کیے گئے ایک سروے کے  نتائج کے مطابق  فوجیوں کا تقریباً نصف صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ  کی سرپرستی میں ایک سال  کے اندر وسیع پیمانے کی جنگ  لڑنے  کی سوچ رکھتا ہے۔

روزنامہ ملٹری  نے اسی موضوع پر سال 2017 میں بھی ایک سروے کرایا تھا جس میں اسی سوچ کے حامل  فوجیوں کی تعداد  5 فیصد تک تھی جو کہ اب بڑھتے ہوئے46 فیصد تک ہو گئی ہے۔

بتایا گیا ہے کہ جنگ چھڑنے کی توقع میں اس حد تک اضافہ، ٹرمپ انتظامیہ  کی سر پرستی میں بڑھنے والے عالمی عدم استحکام اور خاصکر روس اور چین کی طرح کی بڑی طاقتوں کے پیدا ہونے کے اثرات  کے باعث ہوا ہے۔

 

 



متعللقہ خبریں