صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا اعتراف، امریکہ، روس اور چین سے پیچھے رہ گیا ہے

پینٹاگون نے امریکہ کی مسلح افواج کے چھٹے ونگ یعنی خلائی فورسز کے قیام کے لئے کام شروع کر دیا ہے لیکن اس معاملے میں ہم  روس اور چین سے پیچھے رہ گئے ہیں: صدر ٹرمپ

صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا اعتراف، امریکہ، روس اور چین سے پیچھے رہ گیا ہے

امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اعتراف کیا ہے کہ امریکہ، روس اور چین سے پیچھے رہ گیا ہے۔

ریاست کنٹکی میں منعقدہ اجلاس میں ووٹروں سے خطاب میں  صدر ٹرمپ نے کہا ہے کہ ان کے احکامات پر امریکی وزارت دفاع  پینٹاگون نے امریکہ کی مسلح افواج کے چھٹے ونگ یعنی خلائی فورسز کے قیام کے لئے کام شروع کر دیا ہے لیکن اس معاملے میں ہم  روس اور چین سے پیچھے رہ گئے ہیں۔

ٹرمپ نے کہا ہے کہ "چین اور روس نے مذکورہ فوج کے قیام کا کام زیادہ پہلے سے شروع کر دیا ہے لیکن ہم بھی  دنیا کی شاندار ترین عوام رکھتے ہیں اور دنیا کے بہترین میزائل، بحری جہاز  اور ٹینک پیدا کر رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھئیے : خلائی فوج سن 2020 تک قائم ہو جائے گی: امریکہ

واضح رہے کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ماہِ جون میں وائٹ ہاوس میں قومی اسپیس کونسل اجلاس سے خطاب میں کہا تھا کہ انہوں نے پیٹاگون کو امریکہ کی مسلح افواج کے چھٹے ونگ کے طور پر خلائی فوج قائم کرنے کے لئے فوری طور پر کاروائیوں کے آغاز کے احکامات دئیے ہیں۔

انہوں نے کہا تھا کہ خلاء ایک ایسی جگہ ہے کہ جسے فتح کیا جانا ضروری ہے اور ہم خلاء میں امریکی حاکمیت قائم کرنے پر مجبور ہیں ۔

امریکہ کے نائب صدر مائیک پینس نے بھی اپنے بیان میں کہا تھا کہ سال 2020 میں خلائی فورسز قائم کر دی جائیں گی۔



متعللقہ خبریں