یمن امن مذاکرات میں حوثی باغی عدم تعاون کا شکار ہیں: گریفیتھس

اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی مارٹن گریفیتھس نے کہا ہے کہ یمن کی آئینی حکومت اور اس کے عرب اتحادی سیاسی عمل کو آگے بڑھانے میں تعاون کررہے ہیں مگر حوثی باغیوں کی طرف سے امن عمل میں تعاون نہیں کیا جا رہا ہے

یمن امن مذاکرات میں حوثی باغی عدم تعاون کا شکار ہیں: گریفیتھس

یمن کے لیے اقوام متحدہ کے خصوصی ایلچی مارٹن گریفیتھس نے سلامتی کونسل کے ایک اجلاس سے خطاب میں کہا ہے کہ یمن کی آئینی حکومت اور اس کے عرب اتحادی یمن میں امن  صورت حال اور سیاسی عمل کو آگے بڑھانے میں تعاون کررہے ہیں مگر حوثی باغیوں کی طرف سے امن عمل میں تعاون نہیں کیا جا رہا ہے۔

ان کا کہنا تھاکہ حوثیوں کی عدم دلچسپی اور غیر حاضری کے علی الرغم یمن میں امن مشن جاری رکھا جائے گا۔

گریفیتھس نے سلامتی کونسل کے اجلاس میں یمن میں جاری بحران کے خاتمے کے لیے جاری سفارتی  کوششوں  کے حوالے سے ایک رپورٹ بھی پیش کی۔

 انہوں نے کہا کہ یمنی حکومت اور عرب اتحاد نے یمن میں جو تعمیری  رویہ  اختیار کیا ہے  وہ  اہم ہے ۔

انہوں نے کہا کہ یمن کے آئینی صدر عبد  الربہ منصور ہادی اور ان کی حکومت تنازعے کے پرامن حل کے لیے ہرممکن تعاون کررہےہیں۔

اقوام متحدہ کے ایلچی کا کہنا تھا کہ حوثیوں کی لاپرواہی اور گیر حاضری کے باوجود ہم نے یمن میں قیام امن کی کوششوں کو آگے بڑھایا اور  امید ہے کہ امن  کوششوں  کی راہ میں کھڑی کی جانےوالی رکاوٹیں ناکام ہوں گی۔

ان کا کہنا تھا کہ کوشش کے باوجود ہم ایرانی نواز  حوثی باغیوں کوجنیوا  میں امن عمل میں شریک نہیں کرسکےہیں مگر حوثیوں کے ساتھ صنعاء اور مسقط میں امن بات چیت کی کوششیں جاری رہیں گی۔

انہوں نے سلامتی کونسل پر زور دیا کہ وہ یمن میں امن مذاکرات  کو آگے بڑھانے کے لیےکوششیں تیز کریں۔

 



متعللقہ خبریں