اسد قوتوں اور روس نے ادلیب پر ایک سو سے زائد حملے کیے ہیں، امریکی مندوب

روس ، ایران اور ترکی پورے شام سے  دہشت گردوں کے اثرات کے صفائے  کے معاملے پر اتفاق رائے رکھتے ہیں

اسد قوتوں اور روس نے ادلیب پر ایک سو سے زائد حملے کیے ہیں، امریکی مندوب
روس اور اسد قوتوں کے 100 سے زائد فضاءی حملے
روس اور اسد قوتوں کے 100 سے زائد فضاءی حملے

روس اور اسد قوتوں کے 100 سے زائد فضاءی حملے

متحدہ امریکہ  کی اقوام متحدہ میں مستقل مندوب  نیکی ہیلے  کا کہنا ہے کہ روس اور اسد قوتوں نے ادلیب پر ایک سو سے زائد  فضائی حملے کیے ہیں۔

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل  کا اجلاس روس کی درخواست پر منعقد ہوا ۔

اس موقع پر امریکی مندوب ہیلی  نے کہا کہ "روس، ایران اور اسد انتظامیہ سیاسی حل کے قریب نہیں پھٹک رہیں۔ ترکی  نے  اس حقیقت سے گزشتہ ہفتے آگاہی حاصل کی  ہے۔ اس نے ادلیب میں فائر بندی کامطالبہ کیا جسے ان دونوں  نے مسترد کر دیا۔

روس کے نمائندے واسیلی نبنزیہ  نے  بھی  ایران میں شام سربراہی اجلاس کے بارے میں بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ  ادلیب میں ہزاروں کی تعداد میں الا نصرہ اور داعش کے عسکریت پسند روپوش ہیں، روس ، ایران اور ترکی پورے شام سے  دہشت گردوں کے اثرات کے صفائے  کے معاملے پر اتفاق رائے رکھتے ہیں۔

شام  کے بحران کا سیاسی حل کے علاوہ کوئی دوسرا متبادل موجود نہ ہونے کا ذکر کرنے والے نبنزیہ نے کہا کہ سیاسی حل  کا فیصلہ کرنے والے مسلح مخالفین کو فوری طور پر  دہشت گردوں سے نجات حاصل کرنی ہو گی اور ہماری یہ اپیل  پوری عالمی برادری سے ہے۔

تہران سربراہی اجلاس میں شام کی نشاطِ نو کیے جانے کے معاملے پر غور کیے  جانے اور اس حوالے سے  حالات  کے ساز گار ہونے   کی وضاحت کرتے ہوئے نبنزیہ نے مزید کہا کہ شام میں انسانی امداد، بارودی سرنگوں کی صفائی اور بنیادی ڈھانچے کی ازسر نو تعمیر کی ضرورت ہے تا ہم مغرب اس معاملے میں سیاسی  بلیک میلنگ کر رہا ہے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ شامی مہاجرین کی وطن واپسی کے لیے  ہم ترکی اور ایران  کے ہمراہ ایک بین الاقوامی کانفرس کے انعقاد کی  کوششوں  میں مصروف ہیں۔

 



متعللقہ خبریں