نیٹو، ہم ترکی کے شام سے خطرات پر جائز خدشات کو سمجھتے ہیں

ہم  ترکی کو دہشت گردی کے خلاف جنگ میں  پیٹریاٹ  بیٹریز اور   دیگر  جدید اسلحہ فراہم کر سکتے ہیں، سیکرٹری نیٹو

نیٹو، ہم ترکی کے شام سے خطرات پر جائز خدشات کو سمجھتے ہیں

نیٹو کے سیکرٹری جنرل  ینز اسٹولٹن  برگ  کا کہنا ہے کہ دہشت گردی کے خطرات کے خلاف  ہم ترکی کے ساتھ  تعاون کی حالت میں ہیں۔

اسٹولٹن برگ نے انادولو ایجنسی   کو بتایا ہے کہ ترکی، نیٹو کا  ایک انتہائی اہم  اتحادی ہے  جس نے  نیٹو  آپریشنز اور مشنز میں  کئی ایک طریقوں سے خدمات فراہم کی ہیں جس  پر ہم اس کے شکر گزار ہیں۔

ترک مسلح افواج  کے عفرین میں شاخ ِ زیتون آپریشن کے حوالے سے اسٹولٹن برگ نے کہا کہ ترکی کو اپنی سلامتی کے حوالے سے جائز خدشات لاحق ہیں۔

نیٹو کی جانب سے  ترکی  سے تعاون کرنے پر  توجہ مبذول کرانے والے  سیکرٹری  جنرل نے  بتایا کہ "اس دائرہ عمل میں ہم  ترکی  کو بعض اعتماد  افروز  تجاویز پیش کر رہے ہیں۔ ہم  ترکی کو دہشت گردی کے خلاف جنگ میں  پیٹریاٹ  بیٹریز اور   دیگر  جدید اسلحہ فراہم کر سکتے ہیں۔"

انہوں نے مزید بتایا کہ نیٹو کے دو  طاقتور اتحادی ممالک ترکی اور امریکہ کے  درمیان  براہ راست  رابطہ  موجود ہے جو کہ باعث مسرت ہے۔

اسٹولٹن برگ نے ترکی  کے روس  سے ایس۔400 فضائی دفاعی نظام خریدنے کے  معاہدے پر بات  کرتے ہوئے کہا کہ "ترکی سمیت تمام تر اتحادی ممالک  اپنی فوجی صلاحیت  میں اضافہ کر سکتے ہیں جو کہ ان کا قومی فیصلہ ہے۔

 

 



متعللقہ خبریں